.

فٹبال عالمی کپ میں انگریزوں پر کریک ڈاؤن کے لیے روسی خواتین کی فورس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روس میں آئندہ برس ہونے والے فٹبال عالمی کپ کے مقابلوں کے دوران اسٹیڈیم میں انگریز تماشائیوں کی ہنگامہ آرائی اور بلوے کا مقابلہ کرنے کے لیے "Ultras" خواتین پر مشتمل فورس تیار کی جا رہی ہے۔

برطانوی اخبار "دی سَن" نے اپنی رپورٹ میں مذکورہ خواتین فورس کی تربیت کے حوالے سے وڈیوز بھی نشر کی ہیں۔ اخبار کے مطابق ملک میں فٹبال کے شدت پسند تماشائیوں یعنیUltars کی ایک بڑی تعداد موجود ہے تاہم صرف ایک 19 سالہ نوجوان لڑکی ڈیانا ایوانووا کو میچ دیکھنے کے لیے آنے سے روکا گیا ہے۔

ڈیانا روس کے فٹبال کلب سِسکا ماسکو کی مداح ہے۔ وہ گزشتہ ماہ ایک فٹبال میچ کے دوران ہونے والے واقعات میں ملوث پائی گئی تھی جس کے بعد اس پر اسٹیڈیم میں آنے پر پابندی لگا دی گئی۔

بعض دیگر خواتین بھی ہیں جو کھیل کے میدانوں میں داخل نہیں ہوتی ہیں اور راستوں اور سڑکوں پر ہنگامہ آرائی کرنے پر اکتفا کرتی ہیں۔ اس وقت بہت سی خواتین پر پابندی عائد ہے جو عالمی کپ سے قبل اٹھا لی جائے گی۔

محض ایک ہفتہ قبل Ultras مرد تماشائیوں پر مشتمل دو گروپوں کے درمیان بدترین جھگڑے میں ایک 30 سالہ شخص گردن ٹوٹ جانے کے باعث اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھا۔