.

یمن میں القاعدہ کا علاقائی امیر ہلاک، ایک خطرناک جنگجو گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمنی فوج کے ایک عہدیدار نے بتایا ہے کہ کل اتوار کو لحج گورنری کے نواحی علاقے الوھط میں دہشت گرد تنظیم ’القاعدہ‘ کا مقامی امیر ایک کارروائی میں ہلاک جب کہ تنظیم کا ایک خطرنان جنگجو گرفتار کر لیا گیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق لحج میں ڈائریکٹر سیکیورٹی بریگیڈیئر صالح السید نے کہا کہ دوماہ کی مانیٹرنگ کے بعد انٹیلی جنس معلومات کی بنیاد پر شدت پسند گروپ القاعدہ کے ایک مقامی کمانڈر ابو ھاشم کے گھر پر چھاپہ مارا گیا، ابو ھاشم کئی ماہ سے مفرور تھا اور سیکیورٹی فورسز اس کی تلاش میں مصروف تھیں۔ چھاپے کے دوران فائرنگ کے تبادلے میں ابو ھاشم ہلاک ہوگیا۔

فوجی عہدیدار کا کہنا تھا کہ فورسز نے ابو ھاشم کو ہتھیار پھینک کر خود کو حکام کے حوالے کرنے کی وارننگ دی تاہم اس نے فوجیوں پر فائرنگ کردی۔ جوابی فائرنگ میں ابو ھاشم ہلاک اور اس کا ایک ساتھی گرفتار کرلیا گیا۔

دہشت گردوں کی فائرنگ سے ایک سیکیورٹی اہلکار بھی مارا گیا جب کہ تین اہلکار زخمی ہوئے ہیں۔

لحج میں یمنی فورسزکی جانب سے القاعدہ کے خلاف حالیہ عرصے کے دوران کامیاب آپریشنز کیے گئے ہیں۔ ان تازہ آپریشنز میں کئی دہشت گرد ہلاک اور گرفتار کیے گئے۔ القاعدہ کے مالی امور کے انچارج عبداللہ احمد ھادی کو بھی ہلاک کردیا گیا۔ لحج مین القاعدہ کے ایک دوسرے شدت پسند رشاد حمادی اور اعمار قاید المعروف ابو علی الحجی کو ہلاک کیا گیا۔