.

شاہ سلمان اور شیخ محمد بن زاید کا خطے کی تازہ صورت حال پر تبادلہ خیال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز سے الریاض میں بدھ کو متحدہ عرب امارات کی مسلح افواج کے نائب سربراہ اور ابو ظبی کے ولی عہد شیخ محمد بن زاید آل نہیان نے ملاقات کی ہے اور ان سے خطے کی تازہ صورت حال اور باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا ہے۔

ملاقات میں سعودی عرب کے ولی عہد اور وزیر دفاع شہزاد ہ محمد بن سلمان بھی موجود تھے۔سعودی پریس ایجنسی ( ایس پی اے ) کے مطابق شیخ محمد بن زاید نے یو اے ای کے صدر شیخ خلیفہ بن زاید آل نہیان کی جانب سے شاہ سلمان کو نیک خواہشات کا پیغام پہنچایا ۔انھوں نے سعودی عرب کی تیزی سے ترقی اور خوش حالی کی خواہش کا اظہار کیا ہے۔ جواب میں شاہ سلمان نے شیخ خلیفہ بن زاید کے لیے ان ہی نیک تمناؤں کا اظہار کیا ہے۔

انھوں نے ملاقات کے دوران میں دونوں برادر ملکوں کے درمیان بھائی چارے پر مبنی دوطرفہ تعلقات اور تمام شعبوں میں انھیں مزید فروغ دینے سمیت خطے کی تازہ صورت حال پر تبادلہ خیال کیا اور بالخصوص القدس کے ملےفر کے تناظر میں مشرق وسطیٰ کے دیرینہ تنازع پر بات چیت کی۔

انھوں نے کہا کہ امریکا کے القدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کے فیصلے کے سنگین مضمرات ہوں گے۔انھوں نے اقوام متحدہ کی متعلقہ قراردادوں اور عرب امن اقدام کے مطابق تنازع فلسطین کے پائیدار حل کی ضرورت پر زوردیا۔

شاہ سلمان اور ابو ظبی کے ولی عہد نے یمن کی تازہ صورت حال اور وہاں ایرانی ملیشیاؤں کو شکست سے دوچار کرنے کے لیے کوششوں پر بھی تبادلہ خیال کیا ۔انھوں نے یمن میں برسرپیکار جارح اور دہشت گرد مسلح تنظیموں پر بھی بات کی جو یمنی عوام ،علاقائی اور بین الاقوامی سلامتی اور استحکام کے لیے ایک خطرہ ہیں۔

ملاقات میں الریاض کے گورنر شہزادہ فیصل بن بندر بن عبدالعزیز ، وزیر مملکت منصور بن متعب بن عبدالعزیز ، الریاض کے نائب گورنر شہزادہ محمد بن عبدالرحمان بن عبدالعزیز ، وزیر داخلہ شہزادہ عبدالعزیز بن سعود بن نایف بن عبدالعزیز ، وزیر مملکت ڈاکٹر مساعد بن محمد بن العیبان اور وزیر خزانہ محمد بن عبداللہ الجدعان موجود تھے۔

یو اے ای کی جانب سے قومی سلامتی کے مشیر شیخ طحنون بن زاید آل نہیان اور نائب وزیراعظم اور صدارتی امور کے وزیر شیخ منصور بن زاید آل نہیان سمیت مختلف اعلیٰ عہدے دار ملاقات میں شریک تھے۔