.

روسی صدر کی سعودی عرب پر حوثیوں کے میزائل حملے کی مذمت

ولادی میر پوتین کا شاہ سلمان کو فون، تازہ کشیدگی پر بات چیت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روس کے صدر ولادی میر پوتین نے تین روز قبل یمن کے ایران نواز حوثی باغیوں کی جانب سے سعودی عرب کے دارالحکومت الریاض پر کیے گئے بیلسٹک میزائل حملے کی شدید مذمت کی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق روسی صدر نے خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز سے ٹیلیفون پر بات چیت کی۔ اس موقع پر صدر پوتین نے یمنی باغیوں کی جانب سے سعودی عرب کو ایک بار پھر دہشت گردی کا نشانہ بنانے کی مجرمانہ کوشش کی مذمت کی۔

شاہ سلمان سے بات کرتے ہوئے صدر پوتین نے کہا کہ ان کا ملک یمنی باغیوں کی طرف سے سعودی عرب پر حملوں کی بھرپور مذمت اور مملکت کی سلامتی کو نقصان پہنچانے کی کسی بھی سازش کو مسترد کرتا ہے۔

دونوں رہ نماؤں کے درمیان یمن کے جنگ زدہ عوام تک امداد کی فراہمی اور متاثرہ علاقوں میں ادویات کی فوری ترسیل پر بھی بات چیت کی گئی۔

خیال رہےکہ منگل کے روز حوثی باغیوں کی طرف سے سعودی عرب کے دارالحکومت الریاض کو بیلسٹک میزائل سے نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی تھی مگر سعودی خود کار دفاعی نظام نے حوثیوں کا بیلسٹک میزائل فضاء میں مار گرایا تھا۔

سعودی عرب پر یمن کے ایران نواز دہشت گردوں کے حملے پر پوری دنیا کی جانب سے شدید رد عمل سامنے آیا ہے اور سعودی عرب کے ساتھ اظہار یکجہتی میں اضافہ ہوا ہے۔ روسی صدر پوتین سے قبل امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے بھی شاہ سلمان کو ٹیلفیون کر کے حوثیوں کے بیلسٹک میزائل حملےکی مذمت کی تھی۔ اس کے علاوہ برطانوی وزیراعظم تھریسا مے اور اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل نے بھی حوثیوں کے سعودی عرب پر حملوں کی شدید مذمت کی ہے۔