.

یمنی فوج نے صنعاء کے نواح میں اہم علاقوں کا آزاد کرالیا ، 53 حوثی باغی ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمنی فوج نے سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحاد کی مدد سے دارالحکومت صنعاء کے مشرق میں واقع نظامت نہم میں مزید علاقوں کو حوثی باغیوں کے قبضے سے آزاد کرا لیا ہے اور فوج کے ساتھ شدید جھڑپوں اور اتحادی فوج کے فضائی حملوں میں 53 حوثی جنگجو ہلاک ہوگئے ہیں۔

یمنی فوج کے ایک ترجمان کرنل عبداللہ الشندقی نے ہفتے کے روز ایک بیان میں بتایا ہے کہ مسلح افواج نے دحشوش کے پہاڑوں ، جبل الطفح ، تبت القانسین اور جبل المشنا کو آزاد کرا لیا ہے۔ اس محاذ پر لڑائی میں 28 حوثی جنگجو ہلاک اور بیسیوں زخمی ہوگئے ہیں۔

قبل ازیں عرب اتحادی افواج نے صنعاء کے شمال میں واقع نظامت ارہاب میں مسلح حوثیوں کے ایک گروپ کو حملے میں نشانہ بنایا تھا اور فضائی بمباری میں 25 مسلح حوثی ہلاک اور دسیوں زخمی ہوگئے تھے۔

کرنل الشندقی نے بتایا ہے کہ عرب اتحاد کے ایک لڑاکا طیارے نے حوثی ملیشیا کے چیک پوائنٹس پر متعدد حملے کیے ہیں ۔ان میں پانچ حوثی جنگجو مارے گئے ہیں اور ان دو گاڑیاں تباہ ہوگئی ہیں۔ان کا کہنا ہے کہ ابھی تک ان محاذوں پر لڑائی جاری ہے اور حوثی جنگجو صنعاء کی جانب پسپا ہورہے ہیں۔

ذرائع کے مطابق یمنی فوج نے پانچ دن کے محاصرے کے بعد تبت القانسین کے علاقے کو آزاد کرایا ہے جبکہ سرکاری فوجیوں کو حوثی باغیوں کے مقابلے میں پیش قدمی میں شدید مشکلات کا سامنا ہے کیونکہ اس ملیشیا نے علاقے میں ہزاروں کی تعداد میں بارود ی سرنگیں بچا رکھی ہیں اور وہ انھیں ریموٹ کنٹرول کے ذریعے دھماکوں سے اڑا رہے ہیں۔