.

سڈنی سے دبئی تک رنگا رنگ آتش بازی اور لیزر شو سے نئے سال کا آغاز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

آسٹریلیا کے سب سے بڑے شہر سڈنی میں آتش بازی کے شاندار مظاہرے اور دبئی میں لیزر شو کے ساتھ نئے سال کا آغاز ہوگیا ہے ۔دنیا کے باقی ملکوں میں چند گھٹنے کے وقفے سے رنگا رنگ تقاریب میں نئے سال کا خیرمقدم کیا جارہا ہے جبکہ 2017ء اپنی تمام تر حشر سامانیوں کے ساتھ رخصت ہوگیا ہے۔

دبئی

دبئی میں پہلی مرتبہ لیزر شو کے ساتھ نئے سال کا ا ستقبال کیا گیا ہے اور دنیا کی طویل ترین عمارت برج خلیفہ سے روایتی آتش بازی کا مظاہرہ نہیں کیا گیا ہے۔

متحدہ عرب امارات کے حکام کا کہنا ہے کہ شہریوں کے تحفظ کے نقطہ نظر سے اس مرتبہ نئے سال کے آغاز پر آتش بازی کی جگہ لیزر شو نے لے لی ہے اور اس کو ’’ 2018ء کو روشن کریں‘‘ کا نام دیا گیا ہے۔اس سلسلے میں تین سو سے زیادہ تارکین وطن اور ایک سو سے زیادہ ماہرین نے پانچ ماہ تک تیاریوں میں حصہ لیا ہے۔انھوں نے 7.7 کلومیٹر طویل تار اور 25.3 کلومیٹر طویل رسیاں بچھائی ہیں اور ان کے ساتھ لیزر آلات منسلک کیے گئے تھے۔

آسٹریلیا

آسٹریلیا کے سب سے بڑے شہر سڈنی میں ہمیشہ کی طرح اس مرتبہ بھی سب سے پہلے 2018ء کا استقبال کیا گیا ہے اور اتوار کی نصف شب رات بارہ بجے سے قبل ہی روایتی انداز میں رنگا رنگ آتش بازی کا شاندار مظاہرہ شروع کر دیا گیا۔اس موقع پر قریباً دس لاکھ سے زیادہ افراد ساحل سمندر ،اوپیرا ہاؤس اور دوسرے مقامات پر نئے سال کے آغاز پر ہونے والی آتش بازی کا مظاہرہ دیکھنے کے لیے موجود تھے۔

سڈنی میں سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے۔تاہم حکام کا کہنا تھا کہ کسی قسم کا کوئی سکیورٹی الرٹ جاری نہیں کیا گیا ہے۔

نیوزی لینڈ

پڑوسی ملک نیوزی لینڈ میں ہزاروں افراد نئے سال کے استقبال کے لیے ساحل سمندر اور سڑکوں پر نکل آئے تھے۔جوں ہی نئے سال کا آغاز ہوا تو شہری مراکز میں رنگا رنگ آتش بازی شروع ہوگئی۔لوگوں نے ایک دوسرے سے معانقہ کیا ،گلے لگے اور گانا بجانا شروع کردیا۔

نیوزی لینڈ کے سب سے بڑے شہر آک لینڈ میں ہزاروں افراد اسکائی ٹاور کے ارد گرد جمع ہوئے تھے اور ٹاور کی بلندیوں سے پانچ منٹ تک آتش بازی کا زبردست مظاہرہ کیا گیا۔

لیکن اس سے قریباً تیس کلومیٹر دور واقع جزیرے وائی ہیک میں حکام نے پانی کی کمی کے پیش نظر آتش بازی کو منسوخ کردیا کیونکہ فائر فائٹروں کی ضرورت کے لیے پانی دستیاب نہیں تھا۔

چین

چین کے دارالحکومت بیجنگ میں شدید سردی تھی مگر اس کے باوجود ہزاروں لوگ نئے سال کا استقبال کرنے کے لیے یانگ ڈینگ مین گیٹ پر جمع ہوئے۔ شہر کے جنوبی حصے میں واقع منگ دور حکومت سے تعلق رکھنے والے اس دروازے کی دوبارہ تعمیر کی گئی ہے۔

بیجنگ میں نئے سال کی گھنٹیاں بجنے پر مندروں میں پوجا پاٹ کی جاتی ہے اور لوگ ایک دوسرے سے ملتے ہیں۔

چین بھر میں نئے سال کے آغاز کے موقع پر سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں اور عوامی اجتماعات پر بھگ دڑ اور دہشت گردی کے حملوں سے بچنے کے لیے ہزاروں سکیورٹی اہلکار تعینات کیے گئے تھے ۔چین کے وسطی شہر ژینگ ژو میں ساڑھے تین ہزار پولیس ا ہلکار تعینات تھے۔اس شہر میں ہزاروں شہری نئے سال کے آغاز پر آتش بازی کا مظاہرہ دیکھنے کے لیے جمع ہوئے تھے۔

چین کی سرکاری خبررساں ایجنسی ژنہوا کی رپورٹ کے مطابق صدر شی جین پنگ نے اپنے روسی ہم منصب ولادی میر پوتین کو نئے سال کے آغاز کے موقع پر مبارک باد کا پیغام بھیجا ہے اور کہا ہے کہ چین 2018ء میں بیجنگ کے ساتھ تعاون بڑھانے کے لیے تیار ہے۔

جاپان

جاپان میں شہریوں نے روایتی انداز میں نئے سال کا استقبال کیا ہے۔انھوں نے اپنی عبادت گاہوں میں امن اور اچھے مستقبل کے لیے دعائیں کی ہیں اور نئے سال کے آغاز پر روایتی کھانے نوڈلز اور کالا لوبیا وغیرہ کھائے ہیں۔

ٹوکیو کے زو جوجی ٹیمپل میں نصف شب کے وقت بڑے گھڑیال کو 108 مرتبہ بجایا۔ جاپان بھر میں بدھ مت کے مندروں میں اس سالانہ عمل کو دہرایا جاتا ہے۔

جنوبی کوریا

جنوبی کوریا میں گزرے سال بڑی تبدیلیاں رونما ہوئی ہیں اور صدر کو کرپشن کے اسکینڈل پر اقتدار سے رخصت ہونا پڑا جبکہ پڑوسی ملک شمالی کوریا نے پے درپے میزائلو ں کے تجربات کیے اور وہ جنوبی کوریا کے علاوہ جاپان کے خلاف بھی آمادۂ جنگ نظر آیا۔
جنوبی کوریا کے دارالحکومت سیول کے سٹی ہال کے نزدیک ہزاروں افراد نئے سال کے آغاز کے موقع پر گھنٹیاں بجانے کی تقریب کو دیکھنے کے لیے جمع تھے۔

لاس ویگاس

امریکا کے شہر لاس ویگاس میں ہزاروں لوگ نئے سال کے استقبال کے موقع پر رنگا رنگ آتش بازی کا مظاہرہ دیکھنے کے لیے جمع تھے اور اس موقع پر سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے۔لاس ویگاس کے محکمہ میٹرو پولیٹن پولیس نے اتوار کو تمام اہلکاروں کی چھٹی منسوخ کردی تھی ۔امریکا کی وفاقی حکومت نے بھی اس موقع پر سیکڑوں اہلکاروں کو سراغرسانی اور دوسرے سکیورٹی انتظامات میں معاونت کے لیے بھیجا تھا۔

جنوبی افریقا

جنوبی افریقا کے سب سے بڑے شہر جوہانسبرگ میں نئے سال کے موقع پر عجیب اور خطرناک رسم پر عمل کیا جاتا ہے اور شہر کے علاقے ہل برو میں لوگ اپنا قیمتی گھریلو سامان چولھے ،فرنیچر اور ریفریجریٹرز وغیرہ بالائی منازل سے نیچے پھینک دیتے ہیں۔اس کے علاوہ شہر میں لوٹ مار کے واقعات بھی عروج پر ہوتے ہیں۔

سڈنی میں  نئے سال کے آغاز  پر آتش بازی کا مظاہرہ ۔
سڈنی میں نئے سال کے آغاز پر آتش بازی کا مظاہرہ ۔
چین میں  نئے سال  کا  استقبال
چین میں نئے سال کا استقبال