.

ایران عوامی غم و غصہ دبانے میں بری طرح ناکام رہا: جیمز میٹس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا کے وزیر دفاع جیمز میٹس نے کہا ہے کہ طاقت کے استعمال کے باوجود ایران عوام کے غیض وغضب کو ختم کرنے میں ناکام رہا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ امریکا مسئلہ ایرانی عوام نہیں بلکہ ایرانی رجیم ہے۔

آج جمعہ کو ’اسکائی نیوز‘ چینل پر نشر ایک بیان میں امریکی وزیر دفاع نے کہا کہ ان کے ملک کا مسئلہ ایران کی آمرانہ حکومت ہے۔ ایرانی عوام کی ایک بھاری اکثریت ایرانی رجیم کو قبول نہیں کرتی۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایرانی رجیم نے طاقت کے بل پر چند سال قبل سبز انقلاب تحریک تو کچل دی تھی مگر ایرانی حکمران عوام کے دلوں پائے جانے والی نفرت اور غصے کو ختم نہیں کر سکے ہیں۔

قبل ازیں امریکی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں پرامن مظاہرین کے خلاف طاقت استعمال کرنے والے ایرانی عہدیداروں کے خلاف قانونی چارہ جوئی کا عزم ظاہر کیا تھا۔ بیان میں کہا گیا تھا کہ پرامن مظاہرین پر طاقت کے استعمال، انہیں گرفتار کرنے اور تشدد کرنے والے ایرانی حکام کو کبھی نہیں بھولا جائے گا۔

خیال رہے کہ ایران میں گذشتہ ہفتے ملک میں جاری معاشی اور سماجی ناانصافیوں کے خلاف عوام سڑکوں پر نکل آئے تھے۔ کئی روز تک جاری رہنے والے احتجاج کے دوران حکومت مخالف نعرے لگائے گئے۔ ایرانی پولیس اور سیکیورٹی اداروں نے پرامن مظاہرین کے خلاف طاقت کا وحشیانہ استعمال کیا، جس کے نتیجے میں اکیس شہری جاں بحق، سیکڑوں زخمی اور بیسیوں گرفتار کر لیے گئے تھے۔