.

یو اے ای عالمی ادارے کوقطر ی لڑاکا جیٹ کی پروازوں میں رخنہ ڈالنے کی شکایت کرے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات (یو اے ای) نے اقوام متحدہ کے تحت عالمی ایوی ایشن ایجنسی کو قطر کے خلاف اپنے دو مسافر طیاروں کی پرواز میں رخنہ ڈالنے کی شکایت دائرکرنے کا اعلان کیا ہے۔

متحدہ عرب امارات نے قطر پر سوموار کے روز بحرین کی جانب پرواز کے دوران اپنے دو مسافر طیاروں کو لڑاکا جیٹ کے ذریعے روکنے کا الزام عاید کیا ہے۔قطر نے اس الزام کی تردید کی ہے۔

یو اے ای کی جنرل سول ایوی ایشن اتھارٹی کے ڈائریکٹر جنرل سیف محمد السویدی نے رائیٹرز کو بتایا ہے کہ عالمی سول ایوی ایشن تنظیم ( آئی سی اے او ) کے نام درخواست میں قطر پر شکاگو کنونشن کی خلاف ورزی کا الزام عاید کیا جائے گا۔اس کنونشن میں فضائی حدود کے استعمال کے قواعد وضوابط بتائے گئے ہیں۔

السویدی نے کہا کہ ’’قطر کے دو لڑاکا طیارے خطرناک انداز میں امارات ائیر لائنز کے طیاروں کے نزدیک آئے تھے۔اس وقت اماراتی طیارے منامہ کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر اترنے کے لیے فضائی بلندی سے نیچے اتر رہے تھے۔قطری طیاروں کو اماراتی ہوا بازوں اور مسافروں نے بھی اس طرح پروازوں کے نزدیک آتے دیکھا تھا اور یہ بہت ہی سنگین خلاف ورزی ہے‘‘۔

واضح رہے کہ متحدہ عرب امارات ، سعودی عرب ، بحرین اور مصر نے قطر پر گذشتہ سال جون سے سفری ، سفارتی اور تجارتی پابندیاں عاید کررکھی ہیں ۔ان چاروں ممالک نے قطر پر دہشت گردی کی حمایت کا الزام عاید کیا تھا ا ور اس بناپر ہی اس سے تعلقات منقطع کیے تھے لیکن قطر اس الزام کی تردید کرتا چلا آرہا ہے۔