.

اسلام کی حقانیت سے مثاترہ کینیڈین مسیحی خاتون نے اسلام قبول کر لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

کینیڈا کی ایک عیسائی خاتون اسلام میں حضرت عیسیٰ علیہ السلام کے مقام اور مرتبے سے متعارف ہونے کے بعد حلقہ بگوش اسلام ہو گئی۔

تفصیلات کے مطابق سعودی طالب علم محمد العتیبی کا کہنا ہے کہ ایک عیسائی طالبہ کینیڈا کی یونیورسٹی میں ان کی ہم جماعت تھی۔ وہ مسلمانوں کے اخلاق اور دینی تعلیمات کی پابندی سے متاثر ہو کر اسلام کے بارے میں وقتاً فوقتاً سوالات کرتی رہتی تھی۔ جب بھی وہ اسلام سے متعلق کوئی بات دریافت کرتی ہم اسے اسلام کی روا داری، دین متین میں انسانی حقوق کے احترام، فرد اور معاشرے کی حیثیت سے متعلق مستند معلومات گوش گذار کرتے تھے۔

رپورٹ کے مطابق آخری بار اس نے دریافت کیا کہ مسلمانوں کا، عیسیٰ علیہ السلام سے متعلق کیا عقیدہ ہے۔ اس کے جواب میں بتایا گیا کہ مسلمان انہیں اللہ کا پیغمبر مانتے ہیں۔ اللہ کا بندہ تسلیم کرتے ہیں جبکہ نصرانیت میں حضرت عیسیٰ علیہ السلام کی مغالطہ آمیز تصویر کی بابت بھی چشم کشا حقائق پیش کئے گئے۔

آٹھ ماہ بعد اس نے یہ کہہ کر اسلام قبول کر لیا کہ میں پوری طرح سے اسلام کی حقانیت اور صداقت کی قائل ہو گئی ہوں۔