.

یمنی فوج حیس ڈائریکٹوریٹ کے قریب پہنچ گئی، باغیوں کا گھیرا تنگ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کی آئینی فوج اور مزاحمتی ملیشیا نے مغربی شہر الحدیدہ کے جنوب میں واقع حیس ڈائریکٹوریٹ کا محاصرہ کرلیا ہے۔ توقع ہے کہ جلد ہی یہ علاقہ حوثی باغیوں کے قبضے سے آزاد کرا لیا جائے گا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق جمعہ کو یمنی فوج کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ عرب اتحادی فوج کی معاونت سے الحدیدہ کے کئی اہم علاقوں سے باغیوں کو نکال باہر کیا گیا ہے۔ یمنی فوج کے دستے شہر کے مغرب میں الخوخہ اور جنوب میں موزع کی طرف پیش قدمی کر رہے ہیں۔

تھامہ شاہین بریگیڈ کے آپریشنل انچارج کرنل فاروق الخولانی نے بتایا کہ فوج حیس ڈائریکٹوریٹ مرکز سے محض چار کلومیٹر کی دوری پر ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ سیکیورٹی فورسز تیزی کے ساتھ حیس کے مرکز کی طرف بڑھ رہی ہیں اور باغیوں کے گرد گھیرا تنگ کر دیا گیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ تازہ لڑائی کے دوران الحدیدہ کے علاقوں القرینیہ، حسی احمد، محوی السبیع، الخرابا، حسنی الحنجلہ، دار ناجی اور حیس الخوخہ چوک سے حوثی ملیشیا کو نکال دیا گیا ہے۔

دوسری جانب عرب اتحادی فوج نے بھی الحدیدہ کے مختلف علاقوں میں حوثی باغیوں کے ٹھکانوں پر فضائی حملے جاری رکھے ہوئے ہیں۔

خیال رہے کہ حیس ڈائریکٹوریٹ ساحلی پٹی کو الحدیدہ کے دارالحکومت سے ملاتا ہے جس کی دوسری جانب باب المندب بندرگاہ واقع ہے۔

یہ پیش قدمی ایک ایسے وقت میں جاری ہے جب دوسری جانب یمن کی سرکاری فوج نے تزویراتی اہمیت کے حامل تعز شہر کا بھی محاصرہ کر کے باغیوں کی سپلائی لائن بند کر دی ہے۔