.

عراق کے شہر بصرہ میں سعودی قونصل خانہ دو ہفتے میں دوبارہ کھل جائے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراقی حکومت نے جنوبی شہر بصرہ میں آیندہ دوہفتے میں سعودی عرب کا قونصل خانہ دوبارہ کھولنے کا اعلان کیا ہے۔

سعودی قیادت کی ہدایت پر بصرہ میں جلد ایک عارضی عمارت میں قونصل خانہ قائم کیا جائے گا اور اس کا عملہ آیندہ چند روز میں وہاں پہنچنا شروع کر دے گا۔

سعودی عرب کے ایک وفد نے عبدالرحمان الشہری کی قیادت میں اتوار کو بصرہ کا دورہ کیا ہے۔اس کے بعد انھوں نے کہا کہ قونصل خانہ جلد اپنا کام شروع کردے گا تاکہ عازمین حج اور عمرہ کو درکار خدمات مہیا کی جاسکیں اور دونوں ملکوں کے درمیان سفر کے لیے سرمایہ کاروں کو دستاویزات جاری کی جاسکیں۔

بصرہ کے انتظامی امور کے ایک ذمے دار نے بتایا ہے کہ سعودی قونصل خانے کو جلد سے جلد دوبارہ کھولنے کے لیے شہری انتظامیہ تمام ضروری خدمات مہیا کرے گی۔

یادرہے کہ 1990ء میں دوسری خلیج جنگ کے دوران میں بصرہ میں قائم سعودی قونصل خانے کو بند کردیا گیا تھا۔ بصر ہ کو عراق کا دوسرا بڑا شہر شمار کیا جاتا ہے اور یہاں امریکا ،روس اور ایران سمیت پانچ اور ممالک نے بھی اپنے قونصل خانے قائم کررکھے ہیں۔