.

الحدیدہ صوبہ آزاد کرائے جانے کے قریب ہے: یمنی صدر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے صدر عبدربہ منصور ہادی کا کہنا ہے کہ الحدیدہ صوبہ آزادی اور باغی ملیشیا سے چھٹکارہ حاصل کرنے کے قریب ہے۔

ہادی کے مطابق ریاست کی واپسی ایک اٹل اقدام ہے۔ انہوں نے باور کرایا کہ یمنی فوج اور عوامی مزاحمت کاروں کی کوشش اور عرب اتحاد کی سپورٹ سے حوثی ملیشیا کا خاتمہ کر دیا جائے گا۔

اس سے قبل یمنی فوج نے صنعاء کے مشرق میں واقع نہم گورنری میں حوثیوں کا ایک ایرانی ساختہ ڈرون جاسوس طیارہ مار گرایا۔

ذرائع کے مطابق عرب اتحادی طیاروں نے الحدیدہ شہر میں جنگی ہوائی اڈے پر متعدد حملے کیے اور اس دوران بیلسٹک میزائلوں کے ایک لانچنگ پیڈ اور باغیوں کی کمک کو تباہ کر دیا۔

حملوں میں 8 باغی ہلاک ہو گئے جن میں میزائل ماہرین بھی شامل ہیں۔

اتحادی طیاروں نے الحدیدہ کے جنوب میں حیس گورنری کے شمالی اور جنوبی اطراف میں بھی حوثیوں کی کمک کو نشانہ بنایا۔ الجراحی کے علاقے سے آنے والی اس کمک کا مقصد حال ہی میں آزاد کرائی جانے والی گورنری حیس پر حملہ کرنا تھا۔