.

"حوثیوں کی دھمکی" سے باغی ملیشیا کی نئی ناکامی کا انکشاف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں حوثیوں کی جانب سے مقرر کردہ تعز صوبے کے گورنر عبدہ الجندی نے حوثی ملیشیا کے زیر قبضہ ضلعوں کے سربراہان کو دھمکی دی ہے کہ اگر انہوں نے ملیشیا کے لیے جنگجوؤں کو بھرتی نہ کیا تو انہیں عہدے سے علاحدہ کر دیا جائے گا۔

اس حوالے سے سامنے آنے والی ایک وڈیو میں مذکورہ گورنر ضلعوں کے سربراہان کے ساتھ ملاقات کرتا ہوا نظر آ رہا ہے اور اس کے ساتھ باغیوں کی حکومت میں صدارتی دفتر کا ڈائریکٹر طلال عقلان بھی موجود ہے۔ یہ وڈیو اس امر کو ظاہر کرتی ہے کہ حوثی ملیشیا لڑائی کے میدان میں اپنے جانی نقصان کی تلافی کے واسطے نئے عناصر کو پھانسنے میں ناکام ہو چکی ہے۔

واضح رہے کہ 1970ء کی دہائی سے اپنی سیاسی قلابازیوں کے سبب معروف عبدہ الجندی سابق صدر علی عبداللہ صالح کی جماعت جنرل پیپلز کانگریس کے ترجمان کے طور پر کام کر رہا تھا۔ علی صالح کے قتل کے بعد وہ حوثیوں کے ساتھ شامل ہو گیا۔