.

سعودی عرب میں بعض شاہراہوں پر حد رفتار 140 کلومیٹر فی گھنٹا مقرر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں بعض بڑی شاہراہوں پر تمام گاڑیوں کی نئی حد رفتار مقرر کی گئی ہے اور اس پر آج سوموار سے عمل درآمد کا آغاز ہوگیا ہے۔

سعودی عرب کے محکمہ ٹریفک اور سکیورٹی کے افسر تعلقات عامہ کرنل سامی بن محمد الشوریخ نے بتایا ہے کہ اب ایکسپریس ویز پر کاروں کی حد رفتار فی گھنٹا 140 کلومیٹر ، بسوں کی 100 کلومیٹر اور ٹرکوں کی 80 کلومیٹر فی گھنٹا ہوگی ۔

انھوں نے بتایا کہ ان شاہراہوں پر نئی مقرر کردہ حد رفتار کے مطابق نئے اطلاعی اشارے لگائے جائیں گے۔ انھوں نے ڈرائیوروں کو خبردار کیا ہے کہ وہ حد رفتار سے تجاوز نہ کریں اور سائن بورڈ ز پرلکھی ہدایات کی سختی سے پیروی کریں۔

جن شاہراہوں پر حد رفتار میں تبدیلی کی گئی ہے، ان میں الریاض سے الطائف کے درمیان واقع شاہراہ ، الریاض ، القصیم روڈ اور دارالحکومت سے مکہ کی جانب جانے والی شاہراہ شامل ہے۔

سعودی خصوصی فورسز برائے تحفظ شاہرات نے کہا ہے کہ نئی حد رفتار کا یہ مطلب نہیں ہے کہ ڈرائیور حضرات اپنی گاڑیوں کو زیادہ سے زیادہ حد رفتار تک چلائیں۔

سعودی عرب سڑک حادثات میں ہونے والی ہلاکتوں کی شرح کے اعتبار سے دنیا میں بیسویں نمبر پر ہے اور عرب ممالک میں دوسرے نمبر پر ہے۔ان حادثات کی روک تھام کے لیے سعودی حکومت ہر سال قریباً اکیس ارب ریال خرچ کرتی ہے۔

حکومت حادثات اور ان میں ہونے والی ہلاکتوں پر قابو پانے کے لیے انجمن ہلال احمر اور محکمہ ٹریفک کے تعاون سے آگہی مہمیں بھی چلاتی رہتی ہے لیکن ان سے کوئی خاطر خواہ نتائج برآمد نہیں ہوئے ہیں۔

ماہرین کے مطابق شہریوں میں گاڑیوں کو بہتر انداز سے چلانے اور ٹریفک قوانین کی پاسداری سے متعلق شعور اجاگر کرکے ہلاکتوں اور زخمیوں کی شرح کو پندرہ فی صد تک کم کیا جاسکتا ہے۔ان کا کہنا ہے کہ حادثات کی شرح کو کم کرنے کے لیے سخت ٹریفک قوانین کا نفاذ ہونا چاہیے ۔روڈ میپ کو بہتر بنانے کی ضرورت ہے اور متعلقہ حکام کے ساتھ تعاون کے ذریعے موٹر گاڑیوں کے سواروں ،مسافروں اور راہ گیروں کو تحفظ مہیا کیا جانا چاہیے۔