.

سعودی عرب : گذشتہ سال ایک کروڑ 20 لاکھ غیرملکیوں کو ویزوں کا اجراء

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

گذشتہ سال کے دوران میں سعودی عرب میں ایک کروڑ بیس لاکھ غیر ملکی تارکینِ وطن حج ، عمرے ، روزگار ، سیر اور کاروبار کے لیے آئے تھے۔

سعودی عرب کے نائب وزیر خارجہ برائے قونصلر امور اور ڈائریکٹر جنرل برائے ویزا ایڈمنسٹریشن عبدالرحمان الیوسف نے بتایا ہے کہ گذشتہ سال وزارت نے غیر ملکیوں کو ایک کروڑ بیس لاکھ ویزے جاری کیے تھے۔

انھوں نے مزید بتایا ہے کہ ان میں پانچ لاکھ وزٹ ویزے اور پانچ لاکھ کاروباری ویزے تھے۔کاروباری ویزے دو سال کے لیے کارآمد ہوتے ہیں اور ان پر متعدد مرتبہ سعودی عرب آیا جاسکتا ہے۔

سعودی عرب کی جنرل اتھارٹی برائے شماریات کی جانب سے گذشتہ ماہ جاری کردہ ایک رپورٹ کے مطابق 2017ء کی تیسری سہ ماہی میں 94 ہزار تارکین ِوطن ورکرمملکت سے واپس چلے گئے تھے۔

گذشتہ سال کی دوسری سہ ماہی میں سعودی عرب میں نجی اور سرکاری شعبوں میں ایک کروڑ سات لاکھ 90 ہزار افراد کام کررہے تھے۔ تیسری سہ ماہی میں ان کی تعداد میں قریباً ایک لاکھ کی کمی واقع ہوئی تھی اور اس میں ایک کروڑ چھے لاکھ افراد کام کررہے تھے۔جولائی اور ستمبر کے درمیان میں 94390 غیرملکی ورکروں کی تعداد میں کمی واقع ہوئی تھی۔

2017ء کی تیسری سہ ماہی میں سعودی عرب میں کام کے لیے 509180 ویزے جاری کیے گئے تھے۔سرکاری شعبے کے لیے 22.3 فی صد ویزے اور نجی شعبے کے لیے 39.9 فی صد ویزے جاری کیے گئے تھے۔

رپورٹ کے مطابق سعودی عرب میں گھریلو ملازمین کی بھرتی کے لیے 37.8 فی صد ویزوں کا اجراء کیا گیا تھا ۔سعودی حکومت کی جانب سے غیر ہنر مند غیرملکی تارکین وطن پر مختلف محصولات عاید کیے گئے ہیں جس کے بعد وہ وہاں سے آبائی وطن کی راہ لے رہے ہیں۔