.

یمنی فوج صنعاء کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کے قریب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمنی فوج نے باور کرایا ہے کہ دارالحکومت صنعاء کے شمال میں واقع ضلع ارحب میں اس کی فورسز کی پیش قدمی ایک "بڑی کامیابی" ہے۔

ہفتے کے روز یمنی فوج کے ریزرو فورس کے کمانڈر بریگڈیئر جنرل سمیر الحاج نے بتایا کہ اس پیش قدمی کے نتیجے میں سرکاری فورسز صنعاء کے بین الاقوامی ہوائی اڈے سے ایک قدم کے فاصلے پر آ جائیں گی۔

ارحب ضلع کی بالائی چوٹیاں براہ راست صنعاء کے ہوائی اڈے اور الدیلمی کے فضائی اڈے کے سامنے آتی ہیں۔

الحاج کے مطابق یمنی فوج کا ارحب تک پہنچنا صنعاء کے شمال سے اُن حوثیوں کے لیے آنے والی کمک اور امداد کو روک دے گی جو صنعاء کے مشرق میں نہم ضلع کے بقیہ ٹھکانوں پر موجود ہیں۔

الحاج نے اپنے اخباری بیان میں کہا کہ حوثی ملیشیا تمام عسکری محاذوں پر بھاری نقصان سے دوچار ہو رہی ہے۔

یمنی فوج نے جمعہ کے روز دارالحکومت صنعاء کے شمال مشرق میں واقع ضلع ارحب پر حملے کا اعلان کیا تھا۔ اس کے بعد الجوف اور نہم آنے والے راستوں پر کنٹرول حاصل کر لیا گیا۔

عرب اتحاد کی فورسز کی معاونت سے یمنی فوج کی تازہ ترین پیش قدمی کا مقصد صنعاء کو حوثی ملیشیا کے کنٹرول سے واپس لینے کے معرکے میں بڑی پیش رفت کو یقینی بنانا ہے تاکہ حوثیوں کی بغاوت کا مکمل طور خاتمہ کیا جا سکے۔ ارحب ضلع تزویراتی اہمیت کا حامل ہے۔