.

کویت میں مزید بنگلہ دیشی ورکروں کی آمد پر پابندی بحال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

کویت کی وزارتِ داخلہ نے بنگلہ دیشی ورکروں کی بھرتی پر پابندی پھر بحال کردی ہے اور اب مزید بنگلہ دیشی تارکینِ وطن کو اس خلیجی ریاست میں کام کے لیے بھرتی نہیں کیا جاسکے گا ۔

کویت ٹائمز کی ایک رپورٹ کے مطابق بنگلہ دیش سے تعلق رکھنے والے ورکر اس وقت بعض سخت قواعد کے تحت ریاست میں کام کر سکتے ہیں اور کررہے ہیں۔ان میں ایک شرط یہ ہے کہ وہ کسی ایسے آجر کے ہاں ملازمت اختیار کرسکتے ہیں جس کا اپنا ملکیتی مکان ہو۔

اخبار نے لکھا ہے کہ وزارت داخلہ نے یہ فیصلہ گذشتہ ہفتے ایک مطالعے کے بعد کیا ہے۔اس سے یہ بات سامنے آئی تھی کہ کویت میں کام کرنے والے بنگلہ دیشی تارکین وطن کی تعداد دو لاکھ سے متجاوز ہوچکی ہے۔

اس کے بعد انڈر سیکریٹری برائے شہریت اور پاسپورٹس امور شیخ ماذن الجراح نے بنگلہ دیشی ورکروں کی کویت میں آمد پر پابندی لگانے کا فیصلہ کیا ہے۔ یہ واضح نہیں کیا گیا ہے کہ آیا مستقبل میں سخت پابندیوں کے ساتھ اس فیصلے پر نظرثانی کی جائے گی یا پھر یہ ایک طویل المیعاد فیصلہ ہے۔