.

صعدہ: یمنی فوج کے اہداف حاصل، رازح ضلعے کے دیہات آزاد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمنی فوج میں سرحدی محافظین کے چھٹے بریگیڈ کے کمانڈر بریگیڈیئر جنرل حسين حسان الغمری نے منگل کی شام بتایا کہ صعدہ صوبے کے ضلعے رازح میں مختلف علاقے آزاد کرانے کے لیے شروع کیا جانے والا عسکری آپریشن اپنے تمام اہداف حاصل کرنے میں کامیاب ہو گیا۔

الغمری کے مطابق یہ آپریشن چار محوروں سے شروع کیا گیا۔ تقریبا 48 گھنٹوں کی شدید لڑائی کے بعد یمنی فوج تزویراتی اہمیت کے حامل جبل ازہور اور اس کے اطراف تمام دیہات آزاد کرانے میں کامیاب ہو گئی۔ اس کے علاوہ جبل حجلہ اور آل علی اور القد کے علاقوں کا کنٹرول بھی حاصل کر لیا گیا ہے۔

الغمری نے بتایا کہ مذکورہ آزاد کرائے گئے علاقوں کا رقبہ 30 مربع کلومیٹر کے قریب بنتا ہے۔ ان علاقوں کی آبادی تقریب 20 ہزار ہے۔

یمنی فوج کے میڈیا سینٹر نے الغمری کے حوالے سے بتایا کہ حوثی ملیشیا کی کمر ٹوٹ چکی ہے اور اس کی کمین گاہوں تک پہنچنے کا وقت قریب آ چکا ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ آنے والے دونوں میں رازح ضلعے کے بقیہ علاقوں کو آزاد کرانے کے لیے فوجی آپریشن ککے دوسرے مرحلے کے آغاز کے بعد مزید کامیابیاں سامنے آئیں گی۔

یمنی فوج نے عرب اتحاد کی معاونت سے رازح ضلعے میں نمایاں پیش رفت کے دوران تزویراتی اہمیت کے حامل ازہور کے پہاڑی سلسلے پر اپنا کنٹرول مضبوط کر لیا۔ یمنی فوج کے میڈیا سینٹر کی جانب سے رازح ضلعے میں ازہور کے پہاڑی سلسلے کو آزاد کرانے کے لیے ہونے والے معرکے سے متعلق ایک وڈیو جاری کی گئی ہے۔ عرب اتحاد کی معاونت سے حوثی ملیشیا کے مرکزی گڑھ صعدہ صوبے کو باغیوں سے پاک کرنے کے لیے جاری اس آپریشن کو "سانپ کا سر کچلنا" نام دیا گیا ہے۔