خواتین کو بااختیار بنانے کے موضوع پر برطانیہ اور سعودی عرب کے مشترکہ فورم کا انعقاد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کے دورہ برطانیہ کے موقع پر دونوں ملکوں کے سرکاری اور کاروباری اداروں کے مختلف لیڈروں کے ایک خصوصی فورم کا انعقاد کیا گیا ہے ۔اس فورم کے تحت خواتین کو بااختیار بنانے سے متعلق مختلف موضوعات زیر بحث آئے ہیں ۔

جمعرات کو اس فورم کے دوسرے سیشن کا موضوع : ’’خواتین میں قیادت :ابھرتے ہوئے لیڈروں کو با اختیار‘‘ بنانا تھا۔سعودی عرب کے جامع اصلاحات کے ویژن 2030ء میں خواتین کے کردار کو مرکزی حیثیت دی جارہی ہے۔اس لیے اس سیشن کا مقصد سیر حاصل بحث کے بعد سعودی حکومت کو سماجی اقتصادی اصلاحات کے لیے ایک خاکا تیار کر کے دینا تھا تاکہ معاشرے میں خواتین کے وسیع تر کردار کے لیے ایک سازگار ماحول پیدا کیا جاسکے۔

اس سیشن کے اہم ذیلی موضوعات حسب ذیل تھے:
خواتین کی معاشرے ، حکومت اور کاروبار کی تمام سطحوں میں شرکت کی حوصلہ افزائی کے لیے میکانزم کی شناخت ،کاروباری خواتین اور لیڈروں کو درپیش چیلنجز کی تفہیم ،اس کا مستقبل کے پالیسی لائحہ عمل میں اطلاق ،اب تک ہونے والی پیش رفت کا جائزہ اور ثقافتی غلط فہولیں کا اِزالہ ۔

اس سیشن میں سعودی عرب کی جانب سے فیڈریشن برائے کمیونٹی اسپورٹس کی صدر ریما بنت بندر ، سعودی عرب کی نائب وزیر محنت اور سماجی ترقی تماضر الرماح، ڈاکٹر بسمہ صالح البحیران ، سامبا فنانشیل گروپ کی چیف ایگزیکٹو آفیسر رانیا ناشار اور مسک ایجادات کی ایگزیکٹو مینجر دیماح علیحہ شامل تھیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں