روحانی اور ایردوآن کا الغوطہ میں جنگ بندی پر اتفاق‎

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ترک صدر رجب طیب ایردوآن اور ان کے ایرانی ہم منصب حسن روحانی نے ٹیلیفون پربات چیت میں شام کے جنگ زدہ علاقے مشرقی الغوطہ میں جلد جنگ بندی سے اتفاق کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ترک ایوان صدر کی طرف سے جاری کردہا ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ دونوں صدور نے ٹیلیفون پر دوطرفہ امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا۔ اس موقع پر شام کے مشرقی الغوطہ میں اسدی فوج اور روس کی معاونت سے جاری کارروائی روکنے کے لیے موثر اقدامات کرنے سے بھی اتفاق کیا گیا۔

ذرائع کےمطابق ایرانی صدرحسن روحانی نے طیب ایردوآن کی جانب سے مشرقی الغوطہ میں جنگ بندی تجویز سے اتفاق کیا ہے۔

قبل ازیں ترک صدر نے اپنے روسی ہم منصب ولادی میر پوتین سے بھی ٹیلیفون پر بات چیت کی تھی۔ اس بات چیت میں بھی مشرقی الغوطہ میں جاری خانہ جنگی ختم کرنے پر بات چیت کی گئی تھی۔

ادھر روسی حکومت کے ترجمان کا کہنا ہے کہ روس، ایران اور ترکی رواں سال اپریل میں شام کے تنازع کے حل کے لیے مشترکہ کوششوں پر متفق ہوگئے ہیں۔

ادھر قزاقستان کی وزارت خارجہ طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہاگیا ہے کہ تین ممالک سولہ مارچ کو آستانہ میں شام کے تنازع پر بات چیت کریں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں