دبئی میں جدید ٹیکنالوجی کی بدولت پولیس اہلکاروں کے بغیر پولیس کاری کا منصوبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

دبئی میں پولیس جدید ٹیکنالوجی کی بدولت انسانی نگرانی کو مزید بہتر اور مؤثر بنا رہی ہے اور پولیس افسروں کا کردار انتظامی ذمے داریوں اور دوسرے روایتی کاموں تک محدود کیا جارہا ہے۔

اس بات کا اعلان دبئی مستقبل فاؤنڈیشن نے کیا ہے ۔دبئی نے ’’ پولیس اہلکاروں کے بغیر پولیس‘‘ کے عنوان سے ایک نیا اقدام شروع کیا ہے ۔ دبئی مستقبل فاؤنڈیشن کے چیئرمین اور دبئی کے ولی عہد شیخ حمدان بن محمد بن راشد آل مکتوم کے مطابق
یہ دبئی 10 ایکس منصوبے کا حصہ ہے اور اس کا مقصد دبئی کو دنیا کے تمام دوسرے شہروں سے دس سال آگے لے جانا ہے۔

اس اقدام کے تحت جنگلوں ، باڑوں اور گھروں میں نئے کیمرے نصب کیے جارہے ہیں تاکہ جدید ٹیکنالوجی کی بدولت کمیونٹی کے تحفظ اور سلامتی کو یقینی بنایا جاسکے۔

دوسرے اقدام کے طور پر کھلی جگہوں اور زیر تعمیر عمارتوں کی فضائی نگرانی کی جائے گی اور پیشگی خبردار کرنے والے کنٹرول نظام کے حامل طیارے کے ذریعے ان کی نگرانی کی جائے گی۔تیسرا اقدام ’’اسٹیشن آن پٹرول ‘‘ (گشتی اسٹیشن) ہے ،اس کا مقصد کسی بھی ہنگامی صورت میں فوری امداد مہیا کرنا ہے۔

دبئی پولیس کے کمانڈر انچیف جنرل عبداللہ المری کا کہنا ہے کہ نئی ٹیکنالوجی کا مطلب تحفظ کی اعلیٰ سطح اور معیار ہوگا ۔ان منصوبوں کے ذریعے ہم پولیس افسروں کے بغیر پولیس کاری کے تصور کو حقیقت کا روپ دے رہے ہیں۔

انھوں نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’ ان منصوبوں کے ذریعے ہم تحفظ اور سکیورٹی کے معیارات کو بہتر بنا کر کمیونٹی کے ساتھ اپنی شراکت داری کو مضبوط بنانا چاہتے ہیں۔ان سے کسی بھی نئے چیلنج پر فوری ردعمل ظاہر کیا جائے گا اور ہم اپنے شہریوں اور مکیوہں کی خوشیوں کو یقینی بنائیں گے‘‘۔

انھوں نے مزید کہا کہ ’’ بعض اوقات مجرموں کی شناخت اور گرفتاری کے لیے پولیس کاری کے روایتی اقدامات کو بروئے کار لانے سے بہت سا قیمتی وقت ضائع چلا جاتا ہے۔ تاہم جدید ٹیکنالوجی کو بروئے کار لا کر ہم آپریشنل کارکردگی کو مزید بہتر بنانا چاہتے ہیں‘‘۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں