صدر ٹرمپ نے ریکس ٹیلرسن کو چلتا کیا ، پومپیو نئے وزیر خارجہ ہوں گے

جینا ہاسپل سی آئی اے کی پہلی خاتون سربراہ مقرر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے وزیر خارجہ ریکس ٹیلرسن کو ان کے عہدے سے ہٹا دیا ہے اور ان کی جگہ سنٹرل انٹیلی جنس ایجنسی (سی آئی اے) کے ڈائریکٹر مائیک پومپیو کو نیا وزیر خارجہ مقرر کرنے کا اعلان کیا ہے۔

صدر ٹرمپ نے منگل کی صبح ایک ٹویٹ میں اپنے اس فیصلے کی اطلاع دی ہے اور کہا ہے کہ جینا ہاسپل کو سی آئی اے کی نئی سربراہ مقرر کیا جائے گا۔وہ امریکا کی اس مرکزی انٹیلی جنس ایجنسی کی پہلی خاتون سربراہ ہوں گی۔

ریکس ٹیلرسن صدر ٹرمپ کے اس اعلان سے چندے قبل ہی افریقا کے دورے سے امریکا لوٹے ہیں۔ صدر نے ٹویٹ میں ریکس ٹیلرسن کا ان کی خدمات پر شکریہ ادا کیا ہے اور نئے وزیر خارجہ کے بارے میں اس توقع کا اظہار کیا ہے کہ وہ شاندار خدمات انجام دیں گے۔

واضح رہے کہ صدر ٹرمپ وزیر خارجہ ریکس ٹیلرسن کی کارکردگی سے مطمئن نہیں تھے اور ماضی میں ان کے درمیان وائٹ ہاؤس میں دو ایک اجلاسوں کے دوران میں سخت جملوں کا تبادلہ بھی ہوچکا ہے۔ قبل ازیں گذشتہ موسم گرما میں ان کے وزیر خارجہ کی حیثیت سے مستعفی ہو نے کی اطلاع منظرعام پر آئی تھی لیکن انھوں نے اس کی تردید کردی تھی۔

امریکی نشریاتی ادارے این بی سی نے تب ایک رپورٹ میں بتایا تھا کہ جولائی میں بوائے اسکاؤٹس آف امریکا کی ریلی سے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ایک سیاسی خطاب کے بعد دونوں میں کشیدگی پیدا ہوئی تھی۔ریکس ٹیلرسن ماضی میں اس تنظیم کی قیادت کرچکے ہیں۔

این بی سی نیوز نے تین بے نامی عہدے داروں کے حوالے سے بتایا تھا کہ 20 جولائی 2017ء کو پینٹاگان میں منعقدہ ایک اجلاس کے بعد ریکس ٹیلرسن نے صدر ٹرمپ کو ’’ احمق ‘‘ قرار دے دیا تھا۔اس اجلاس میں صدر ٹرمپ کی قومی سلامتی کی ٹیم اور کابینہ کے ارکان شریک تھے۔

چند ماہ قبل موقر امریکی اخبار نیویارک ٹائمز نے بھی اپنی ایک اشاعت میں یہ اطلاع دی تھی کہ صدر ٹرمپ نے ریکس ٹیلرسن کو ان کے عہدے سے ہٹانے کا فیصلہ کر لیا ہے اور وہ ان کی جگہ سی آئی اے کے سربراہ مائیک پومپیو کو وزیر خارجہ بنانا چاہتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں