عفرین پر کنٹرول کے بعد اسے شامی حکومت کے حوالے نہیں کریں گے : انقرہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ترکی کے صدر رجب طیب ایردوآن کے ترجمان ابراہیم کالین نے توقع ظاہر کی ہے کہ شام کے علاقے عفرین کو بہت جلد مسلح عناصر سے پاک کر دیا جائے گا۔ سرکاری نیوز چینل TRT سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ "ترکی فوجی آپریشن مکمل ہونے کے بعد عفرین کا علاقہ شامی حکومت کے حوالے کرنے کا کوئی ارادہ نہیں رکھتا"۔

ترجمان کے مطابق شام کے علاقے منبج کے حوالے سے امریکا کے ساتھ روڈ میپ وضع کر لیا گیا ہے اور اگر واشنگٹن نے اپنے وعدے پورے کیے تو منبج کے گرد سیف زون قائم ہو جائے گا۔

ایردوآن کے ترجمان نے بتایا کہ منبج کے حوالے سے امریکا اور ترکی کے معاہدے پر کاربند رہا جا ئے گا اور امریکی وزیر خارجہ کی تبدیلی سے یہ معاہدہ تبدیل نہیں ہو گا۔ انہوں نے بتایا کہ امریکا کے نئے وزیر خارجہ منبج کے معاملے کی اچھی طرح جان کاری نہیں رکھتے ہیں لہذا اس پر عمل درامد میں ایک سے دو ہفتوں کی تاخیر ہو جائے گی۔

ابراہیم کالین کے مطابق ترکی "جبہۃ النصرہ" تنظیم کے جنجگوؤں کو الغوطہ الشرقیہ سے باہر لانے پر کام کر رہا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں