.

ٹرمپ جونیراور ان کی اہلیہ میں علاحدگی، بچے دونوں کی اولین ترجیح

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے بیٹے ٹرمپ جونیر‘ اور ان کی اہلیہ فانیسا نے کل جمعرات کو ایک مشترکہ بیان میں علاحدگی کا اعلان کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ٹرمپ جونیر اور ان کی اہلیہ نے مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ ہم نے 12 سال ایک ساتھ گذارے۔ آج ہم دونوں نے ایک دوسرے کو اپنے اپنے راستے پر چلنے کے لیے چھوڑ دیا ہے۔

بیان میں خانگی تنازع کے بارے میں کوئی وضاحت نہیں کی گئی تاہم بیان میں کہا گیا ہے کہ دونوں ایک دوسرے کے خاندانوں کا احترام کرنے کے ساتھ ایک دوسرے کا حد درجہ احترام کریں گے۔

خیال رہے کہ ٹرمپ جونیر اور فانیسا سنہ 2003ء میں ایک دوسرے سے متعارف ہوئے اور سنہ 2005ء میں رشتہ ازدواج میں منسلک ہو گئے تھے۔ ان کے پانچ بچے اور بچیاں ہیں۔

علاحدگی سے متعلق بیان میں کہا گیا ہے کہ بچے ان دونوں کی اولین ترجیح ہیں۔ انہوں نے اپنے تمام چاہنے والوں اور احباب پر ان کی پرائیسویسی کے احترام پر زور دیا۔

امریکی ذرائع ابلاغ نے جمعرات کو خبر دی تھی کہ ٹرمپ کی بہو نے مین ھٹن کی سپریم کورٹ میں طلاق کے لیے درخواست دی ہے۔ ٹرمپ جونیر کے خاندان میں سامنے آنے والے واقعے پر وائیٹ ہاؤس نے کسی قسم کا تبصرہ کرنے سے انکار کیا ہے۔

ڈونلڈ ٹرمپ کے امریکا میں صدر منتخب ہونے کے بعد فانیسا ٹرمپ منظر سے مسلسل غائب رہی ہیں۔ چند ہفتے قبل فانیسا کا نام اس وقت خبروں میں آیا جب کہا گیا کہ انہیں مکتوب کی شکل میں مشکوک مواد بھیجا گیا۔ تاہم تفتیش کے بعد کہا گیا تھا کہ فانیسا کو ملنے والا مشکوک مواد نقصان دہ نہیں تھا۔

ٹرمپ جونیر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی سابق اہلیہ اور فیشن ماڈل ایفانا کے بطن سے ہیں۔