.

اماراتی شخص کی سری لنکن آیا کو خاندان کے فرد کی حیثیت سے ساتھ رہنے کی پیش کش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات کے ایک شہری نے اپنی سری لنکن آیا کو خاندان کے رکن کی حیثیت سے ہی اپنے ساتھ رہنے کی پیش کش کردی ہے۔اس شخص نے اس آیا اور اس کے ساتھ اپیل پر مبنی انٹرنیٹ پر ایک ویڈیو بھی پوسٹ کی ہے جس کو لوگ بڑی تعداد میں دیکھ رہے ہیں اور دم تحریر اس کو 2 لاکھ 30 ہزار سے زیادہ افراد دیکھ چکے تھے۔

سیلی نامی یہ سری لنکن خاتون اس اماراتی خاندان کے ساتھ 36 سال تک آیا کے طور پر کام کرتی رہی ہیں اور اب وہ اپنے خاوند کی وفات کے بعد اپنے آبائی وطن لوٹ گئی ہیں ۔

خلیج ٹائمز کی ایک رپورٹ کے مطابق اس شخص کو سب سے پہلے اس سری لنکن خاتون کے خاوند کی وفات کی خبر ملی تھی لیکن اس نے اپنی آیا کو نہیں بتایا تاکہ وہ غم زدہ نہ ہو ۔اس نے آیا کے لیے سری لنکا کی ایک پرواز کے ٹکٹ کا بندوبست کیا اور یہ کہا کہ وہ اپنے خاوند سے مل آئیں کیونکہ وہ علیل ہیں اور یہ بالکل بھی نہیں بتایا کہ ان کے خاوند کی موت ہوچکی ہے۔

ویڈیو کے مطابق یہ اماراتی شخص اس سری لنکن خاتون کو ہوائی اڈے پر چھوڑنے جاتا ہے ۔ اس دوران ان سے کہتا ہے کہ وہ جب چاہیں واپس آسکتی ہیں اور ان کی حیثیت اب گھریلو ملازمہ نہیں بلکہ خاندان کے ایک فرد کی ہوگی۔

جب وہ آیا اس اماراتی سے اپنے خاوند کی صحت کے بارے میں دریافت کرتی ہیں تو وہ انھیں بوسا دیتا ہے اور یہ دلاسا دیتا ہے کہ جو اللہ کی منشا ہوگی ، وہی ہوگا۔

اس شخص نے بتایا کہ سیلی نے اس کا اور اس کے بہن بھائیوں کا اپنے بچوں کی طرح خیال رکھا اور پرورش کی کیونکہ اس کے اپنے بچے نہیں تھے۔