قطری ایسے اُچھل رہے ہیں جیسے بچّے کھلونوں کے ساتھ پُھدکتے ہیں: تھامس فریڈمین

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

معروف امریکی مصنف اور صحافی تھامس فریڈمین کا کہنا ہے کہ قطر کی مثال ایسی ہے گویا کہ 3 لاکھ آدمیوں کے پاس 300 ارب ڈالر ہوں اور وہ اپنی قوت کا اظہار اس طرح کر رہے ہوں جس طرح بچّے اپنے کھلونوں کو ساتھ لے کر کرتے ہیں۔ فریڈمین نے مشرق وسطی کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ قطری اس خطّے کو بدل نہیں سکیں گے۔

فریڈمین نے ان خیالات کا اظہار واشنگٹن میں منعقد ایک سیمینار میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ یہ سیمینار منگل کے روز سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کے امریکا کے دورے اور صدر ٹرمپ سے آئندہ ملاقات کے حوالے سے تھا۔

فریڈمین نے کہا کہ "سن 60ء کی دہائی میں قاہرہ یونی ورسٹی سے گریجویشن کی تصاویر پر نظر ڈالیے اور پھر اب ملاحظہ کیجیے۔ آپ کو خطّے میں دو واقعات کے چھوڑے ہوئے اثرات کا فرق نظر آئے گا۔ ایک انقلابِ ایران اور دوسرا مکہ مکرمہ میں جہیمان گروپ کا حملہ ..."

ادھر امریکی دانش ور برنارڈ ہیکل کا کہنا ہے کہ قطر کی جانب سے سعودی عرب کے اکثر اپوزیشن حلقوں کو فنڈنگ دی جا رہی ہے اور وہ ریاض میں حکومت کا تختہ الٹنا چاہتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سعودی عرب میں نظام کی تبدیلی کا خیال دوحہ میں ایک آدمی کی سوچ ہے۔ برنارڈ کے مطابق "ان کے یہاں امریکی فوجی اڈّہ موجود ہونے کے سبب یہ ایک شخص آزادی کے ساتھ حرکت کرتا ہے اور خطّے کے ممالک میں آگ بھڑکا رہا ہے"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں