.

دھمکی آمیزای میل کے بعد برطانوی اسکولوں میں دوڑیں لگ گئیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

انگلینڈ کے ایک اسکول کو نامعلوم شخص کی طرف سے دھمکی آمیز ای میل موصل ہونے کے واقعے نے پورے ملک میں خوف ہراس پھیلا دیا جس کے نتیجے میں اسکولوں میں چھٹی کرادی گئی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سوموار کو ایک اسکول کو ای میل کے ذریعے یہ پیغام ملا کہ اسکول کوکسی بھی وقت دھماکے سے تباہ کیا جاسکتا ہے۔ اس ای میل کے بعد نہ صرف متعلقہ اسکول بلکہ کئی دوسرے علاقوں کے اسکولوں کی عمارتیں بھی خالی کرالی گئیں اور بچوں کو چھٹی دے دی گئی۔

اگرچہ یہ دھمکی آمیز ای میل صرف ایک اسکول کو ملی تھی مگر لوگوں میں یہ افواہ پھیلی کہ برطانیہ کے سیکڑوں اسکولوں کو بم دھماکے سے اڑانے کی ای میلز موصول ہوئی ہیں جس کے بعد اسکولوں کو خالی کرالیا گیا ہے۔ اس افواء کے بعد دارالحکومت لندن کے سیکڑوں اسکول بھی بند کردیے گئے۔

اسکولوں میں دھماکے کرنے کی ای میل کی افواہ پر تمام اسکولوں کی سیکیورٹی سخت کردی گئی۔ اسکولوں کی جانب سے بچوں کے والدین کو بھی تسلی دی گئی کہ ان کے بچے محفوظ ہیں اور ان کے تحفظ کے لیے تمام ممکنہ اقدامات کیے گئے ہیں۔

اخبار ’ڈیلی ایکس پریس‘ نے اپنی ویب سائیٹ پر ایک خبر شائع کی جس میں کہا گیا کہ ملک کے سیکڑوں اسکولوں کو دھمکی آمیز ای میلز موصول ہوئی ہیں جن میں کہا گیا ہے کہ اسکولوں کو بم دھماکوں سےتباہ کیا جائے گا۔ برطانوی پولیس کا کہنا ہے کہ کئی اسکولوں کو دھمکی آمیز پیغامات ملے ہیں جن میں ان سے بھتہ ادا کرنے کہا گیا ہے اور نہ کرنے پر اسکول کو بم سے اڑانے کی دھمکیاں دی گئی ہیں۔

سوموار کے روز مشتبہ ای میلز نے 350 اسکول بند کرادیے۔ بعض اسکولوں کو خراب موسم اور برف باری کی وجہ سے بندکیا گیا۔ ای میل کی افواہ پھیلتےہی والدین نے اسکولوں کا رخ کردیا۔

اخبار ’گارجین‘ کی ویب سائیٹ کے مطابق برطانیہ کے 400 اسکولوں کو دھمکی آمیز ای میلز موصول ہوئی ہیں۔اسکول انتظامیہ نے پہلی فرصت میں ان ای میلز کے بارےمیں پولیس کو مطلع کردیا تھا۔