.

اریٹریا کا قطر اور سوڈان پر دہشت گردی کی مالی معاونت کا الزام

قطر نے اریٹریاکے کسی ممکنہ حملے سے بچاؤ کے لیے سوڈان میں تین لڑاکا مِگ طیارے بھیج دیے : بیان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اریٹریا کی حکومت نے قطر پر سوڈان میں تین لڑاکا جیٹ بھیجنے کا الزام عاید کیا ہے جو اس کے بہ قول اریٹریا کے کسی ممکنہ حملے کے دفاع کے لیے بھیجے گئے ہیں۔اس نے کہا ہے کہ سوڈان میں ایک دور دراز مقام پر اریٹریا کی اسلامی حزب اختلاف کو ایک خفیہ ٹھکانا دیا گیا ہے جہاں اس کو خفیہ طور پر رقوم مہیا کی جارہی ہیں ۔

اریٹریا کی حکومت نے سوموار کو ایک بیان جاری کیا ہے اور اس میں قطر پر الزام عاید کیا ہے کہ وہ ایک سخت گیر عالم دین محمد جمعہ کو رقوم مہیا کررہا ہے۔انھوں نے سوڈان میں ایک نامعلوم مقام پر اپنا دفتر قائم کررکھا ہے۔

بیان کے مطابق :’’ محمد جمعہ کے پیروکاروں نے اپنی سیاسی اور عسکری سرگرمیوں کو منظم کرنے کے لیے ایک دفتر قائم کیا ہے تاکہ اس کے ارکان کو وہاں عسکری تربیت دی جاسکے۔ان کی تمام سرگرمیوں کے لیے خرطوم میں قطر کا سفارت خانہ رقوم مہیا کررہا ہے۔ان کی تربیت اور دوسرے انتظام وانصرام کی ذمے دار سوڈان کی سکیورٹی اور انٹیلی جنس سروس ہے‘‘۔

بیان میں یہ دعویٰ بھی کیا گیا ہے کہ قطر نے سوڈان کی دفاعی فورسز کو تین مِگ لڑاکا جیٹ بھیجے ہیں اور انھیں اریٹریا کی سرحد کے ساتھ واقع سوڈان کے علاقے کسالا میں بھیجا گیا ہے ۔ان میں سے دو طیاروں کے پائلٹ قطری اور ایک کا ایتھوپیائی ہے۔

اریٹریا کی وزارت اطلاعات کےجار ی کردہ اس بیان کے مطابق ان مِگ لڑاکا طیاروں کو اریٹریا کی جانب سے کسی ممکنہ حملے کے خطرے سے نمٹنے کے لیے سرحدی علاقے میں بھیجا گیا ہے لیکن ان کی اس صلاحیت کو متحدہ عرب امارات کی حمایت سے ناکام بنا دیا جائے گا۔

اس میں قطری فوج کے ایک وفد نے خرطوم میں قطری سفیر کی قیادت میں کسالا کے علاقے کے دورے کا بھی حوالہ دیا گیا ہے۔انھوں نے مارچ ہی میں ’’ مشترکہ سوڈانی ، ایتھوپیائی دفاعی یونٹ ‘‘ کا اس کی کارروائیوں کا جائزہ لینے کے لیے دورہ کیا تھا۔اس میں قطر سے سوال کیا گیا ہے کہ وہ اس طرح کی بے مقصد سرگرمیوں میں کیوں خود کو ملوث کررہا ہے۔

بیان میں قطر کے خبری ذرائع کی جانب سے جاری کردہ ایک حالیہ خبر کو من گھڑت کو قرار دیا گیا ہے جس میں یہ دعویٰ کیا گیا تھا کہ اریٹریا کے علاقے ساوا میں مصری فوجیوں کو تعینات کردیا گیا ہے اور اس کے ردعمل میں سوڈان نے اریٹریا کے ساتھ اپنی سرحد کو بند کر دیا ہے۔