.

ترکی ميں ٹريفک حادثہ، پاکستانی مہاجرين بھی جاں بحق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترکی ميں جمعرات اور جمعے کی درميانی شب پيش آنے والے ايک ٹريفک حادثے ميں ايک درجن سے زائد افراد جاں بحق ہو گئے ہيں، جن ميں پاکستانی تارکين وطن بھی شامل ہيں۔

ذرائع کے مطابق ترکی کے مشرقی حصے ميں ايک منی بس حادثے کا شکار ہو گئی ہے جس کے نتيجے ميں کم از کم سترہ تارکين وطن جاں بحق ہو گئے ہيں۔

يہ واقعہ اغدير اور کارس کے درميان واقع سڑک پر جمعرات اور جمعے کی درميانی شب پيش آيا۔ اس حادثے کی اطلاع ترکی کی سرکاری نيوز ايجنسی انادولو نے جاری کی ہے۔ واقعے ميں چھتيس مہاجرين زخمی بھی ہوئے ہيں، جن ميں سے چند ايک کی حالت نازک بتائی جا رہی ہے اور اسی سبب، جاں بحق ہونے والوں کی تعداد ميں اضافے کا امکان بھی موجود ہے۔

اطلاعات ہيں کہ جاں بحق اور زخمی ہونے والوں ميں پاکستانی، افغان ايرانی تارکين وطن شامی ہيں۔ امکاناً متاثرہ بس ميں سوار مہاجرين ايران کے راستے ترکی ميں داخل ہوئے تھے۔

حادثے کا شکار ہونے والی منی بس ميں چودہ افراد کی گنجائش تھی ليکن اس پر پچاس افراد سوار تھے۔ ارمينيا کی سرحد کے قريب يہ بس گزشتہ رات بارہ بجے کے قريب ايک پول سے جا ٹکرائی، جس کے بعد اس ميں آگ بھی لگ گئی۔ واقعے کی تحقيقات شروع کر دی گئی ہيں۔

مزيد تفصيلات کے مطابق چند مہاجرين حادثے ميں ہلاک ہوئے جبکہ ديگر چند منی بس ميں آتش زدگی کے سبب باہر گر کر ايک ٹرک سے ٹکر لگنے کے سبب جاں بحق ہوئے۔ دوسرا ٹرک بھی غير قانونی مہاجرين سے بھرا ہوا تھا۔ پوليس نے اس پر سوار تيرہ تارکين وطن اور ڈرائيور کو حراست ميں لے ليا ہے۔

صوبائی گورنر نے اس واقعے پر افسوس کا اظہار کيا ہے۔