.

یمنی حوثیوں کی جارحیت میں شدّت، نجران پر داغا گیا بیلسٹک میزائل تباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے حوثی شیعہ باغیوں نے سعودی عرب کے شہروں اور گنجان آباد علاقوں کی جانب ایران کے مہیا کردہ میزائلوں سے حملے تیز کردیے ہیں ۔ حوثی ملیشیا نے ہفتے کے روز سعودی عرب کے سرحدی شہر نجران کی جانب میزائل داغا ہے جبکہ مملکت کی شاہی فضائیہ نے اس کو کسی ہدف پر گرنے سے قبل ہی تباہ کردیا ہے۔

العربیہ کے نمائندے کی اطلاع کے مطابق سعودی فورسز نے مقامی وقت کے مطابق صبح 10 بج کر 20 منٹ پر اس میزائل کو تباہ کیا ہے۔عرب اتحاد کی فضائیہ نے یمن میں میزائل داغنے کی جگہ کا سراغ لگا لیا تھا اور اس کو بھی تباہ کردیا ہے۔

حوثی شیعہ باغیوں کا دو روز میں سعودی عرب کی جانب یہ دوسرا میزائل حملہ ہے۔ انھوں نے جمعرات کی شب جنوبی شہر جازان کی جانب ایک میزائل داغا تھا ۔ اس کو بھی سعودی فضائی دفاعی نظام نے فضا میں ناکارہ بنا دیا تھا۔

یمنی حوثیوں کی اس جارحانہ اشتعال انگیزی سے ایک روز قبل ہی اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے ان کے سعودی عرب کی جانب میزائل حملوں کی شدید مذمت کی تھی اور کہا تھا کہ ان بیلسٹک میزائلوں سے پورے خطے کی سلامتی خطرے سے دوچار ہوگئی ہے۔

سلامتی کونسل نے اقوام متحدہ کے تمام رکن ممالک پر زوردیا تھا کہ وہ یمن پر اسلحے کی خرید و فروخت کی پابندی سے متعلق قرارداد نمبر 2216 سمیت تمام قراردادوں کی پاسداری کریں ۔سلامتی کونسل نے اس پابندی کی مسلسل خلاف ورزیوں پر گہری تشویش کا اظہار کیا تھا۔

سعودی عرب کی فضائی دفاعی فورسز نے ایران کے حمایت یافتہ حوثی شیعہ باغیوں کے 6 جون 2015ء کے بعد سے داغے گئے 104 بیلسٹک میزائلوں کو ناکارہ بنایا ہے۔ ان میں ایک سکڈ میزائل بھی شامل تھا ۔سعودی فورسز نے گذشتہ ہفتے دارالحکومت الریاض سمیت چار شہروں کی جانب داغے گئے سات میزائلوں کو فضا ہی میں ناکارہ بنایا تھا۔