سری لنکا کے صدر نے پارلیمنٹ کو معطل کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق سری لنکا کے صدر میتھری پالا سری سینا نے آئین کے آرٹیکل 70 کے تحت اپنے اختیارات کو استعمال کرتے ہوئے پارلیمنٹ کو معطل کر دیا ہے جس کا اطلاق 12 اپریل کی رات سے ہو گیا ہے، معطلی کی مدت 8 مئی تک ہے۔ پارلیمنٹ کی معطلی کا فیصلہ اس وقت سامنے آیا جب سری لنکا کے صدر اور وزیراعظم کے درمیان اقتدار کی چپقلش اور اختلافات کی خبروں کا بازار گرم تھا۔

اس سے قبل سری لنکا کے صدر میتھری پالا سری سینا نے وزیراعظم رانِل وِکرما سنگھے کے اختیارات کو مرحلہ وار کم کرتے ہوئے مرکزی بینک، پالیسیاں مرتب کرنے والے نیشنل آپریشنز اور کئی دیگر اداروں سے متعلق فیصلے کرنے کا اختیار واپس لے لیا تھا۔ اس غیر یقینی صورت حال میں شدت 6 وفاقی وزراء کی جانب سے مستعفی ہونے کے بعد آئی تھی۔

واضح رہے کہ وزیر اعظم رانِل وِکریماسنگھے کی جماعت یونائیٹڈ نیشنل پارٹی نے صدر میتھری پالا سری سینا کے ساتھیوں پر استعفوں کے لیے دباؤ بڑھا دیا تھا جب کے صدر میتھری پالا سری سینا نے تحریک عدم اعتماد میں رانِل وِکریماسنگھے کے خلاف ووٹ بھی دیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں