.

فرانس: لیبیائی سفارت کا خلیفہ حفتر کی صحت کے حوالے سے انکشاف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانس میں لیبیا کے ایک قونصل خانے کے سفارت کار نے اپنا نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر العربیہ ڈاٹ نیٹ کو بتایا ہے کہ لیبیا کی فوج کے سربراہ خلیفہ حفتر جو پیرس کے ایک ہسپتال میں زیر علاج ہیں، ان کی حالت میں معمولی بہتری آئی ہے تاہم وہ ابھی تک خطرے سے باہر نہیں ہیں۔ لیبیا کی فوج کے 74 سالہ قائد کے دماغ پر اچانک فالج کا حملہ ہوا تھا جس کے بعد سے وہ بے ہوش ہیں۔

مشرقی لیبیا میں حکام بدھ کے روز ہر اُس خبر اور رپورٹ کی تردید کر رہے ہیں جس میں حفتر کی حالت کو تشویش ناک قرار دیا گیا۔ ادھر فرانسیسی ذرائع ابلاغ کا کہنا ہے کہ دماغ پر فالج کے حملے کے بعد حفتر کی زندگی کو خطرہ لاحق ہے۔

دوسری جانب حفتر کے زیر قیادت لیبیا کی فوج کے ترجمان احمد المسماری نے بدھ کے روز رات گئے مشرقی شہر بنغازی میں اخباری بیان کے دوران اس خبر پر براہ راست جواب دینے سے منع کر دیا کہ خلیفہ حفتر علاج کے لیے فرانسیسی دارالحکومت پیرس میں ہیں۔