سلامتی کونسل کی کمزوری نے ایران اور حوثیوں جرائم کا موقع دیا: الریاض

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اقوام متحدہ میں سعودی عرب کے سفیر عبداللہ المعلمی نے کہا ہے کہ سلامتی کونسل کی کمزوری نے ایران اور حوثی باغیوں کو خطے کو عدم استحکام سے دوچار کرنے اور بین الاقوامی جہاز رانی کو خطرے میں ڈالنے کا موقع فراہم کیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سلامتی کونسل کے ارکان کو لکھے گئے ایک مکتوب میں عبداللہ المعلمی نے کہا کہ ایران اور حوثیوں کی ریشہ دوانیوں کے خلاف سلامتی کونسل کو فوری حرکت میں آنا چاہیے تھا مگر عالمی ادارے کی کمزوری اور سستی نے حوثیوں اور ایران کو اپنی توسیع پسندانہ سرگرمیوں کو وسعت دینے کا موقع فراہم کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ یمن میں جاری بغاوت کی تحقیق میں کئی سقم رہ گئے جن کا فائدہ ایران اور حوثیوں نےاٹھایا۔ ایران، حوثیوں کو اسلحہ اور میزائل مہیا کرتا رہا اور وہ خطے میں جہاز رانی اور سعودی عرب کی سلامتی کو خطرے میں ڈالتے رہے۔

سعودی عرب کی جانب سے ماضی میں بھی سلامتی کونسل میں ایران کی مداخلت اور خوثیوں کے حملوں کا معاملہ اٹھایا جا چکا ہے۔ سعودی عرب نے سلامتی کونسل پرکو خطے اور عالمی سلامتی کو یقینی بنانے کا ذمہ دار قرار دیا ہے۔ الریاض نے سلامتی کونسل پر زور دیا ہے کہ وہ ایران کی طرف سے حوثیوں کو بیلسٹک میزائل فراہم کرنے کا نوٹس لے اور حوثیوں کا بھی احتساب کرے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں