شام پر حملے پوتن کی توہین ہیں، اس کا خمیازہ بھگتنا پڑے گا: ماسکو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکا میں روس کے سفیر اناطولی انٹونوف نے کہا ہے کہ جو کچھ کیا جا رہا ہے وہ روس کے صدر ولادی میر پوتن کی ناقابل قبول توہین ہے۔ ماسکو اس کی شدید مذمت کرتا ہے۔ امریکا کو دوسری ملکوں پر الزام تراشی کا کوئی حق حاصل نہیں ہے۔

ادھر روسی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ شام پر حملہ ایک ایسے وقت میں کیا گیا ہے جب وہاں قیام امن کے امکانات روشن تھے۔

واشنگٹن میں روسی سفارتخانے کی جانب سے فیس بک پر جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ’ہمارے بدترین خدشات حقیقت کا روپ لے رہے ہیں۔ ہماری تنبیہ کو امریکا میں پھر سے نہیں سنا گیا ہے۔ ایک پہلے سے سوچا سمجھا منصوبہ عمل میں لایا جا رہا ہے۔ ایک بار پھر ہم خطرے سے دوچار ہیں۔

ہم نے خبردار کیا تھا کہ ایسے اقدامات نتائج کے بغیر نہیں جانے دیں گے۔ تمام تر ذمہ داری واشنگٹن، لندن اور پیرس کی ہے۔ روسی صدر کی بے عزتی کرنا ناقابلِ قبول ہے۔ امریکا جس کے پاس کیمیائی ہتھیاروں کا سب سے بڑا ذخیرہ ہے، اسے کوئی اخلاقی حق نہیں کہ وہ دوسرے ممالک پر الزام لگائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں