سعودی عرب میں ڈرون کیسے اُڑیں گے ؟قواعد وضوابط حتمی مراحل میں!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں تفریحی یا کھلونا ڈرونز کے استعمال اور اڑانے کے بارے میں قواعد وضوابط کو حتمی شکل دی جارہی ہے۔

سعودی وزارت ِ داخلہ کے سکیورٹی ترجمان نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ریموٹ کنٹرول سے چلائے جانے والے ڈرونز کے استعمال کے لیے قواعد وضوابط مرتب کیے جارہے ہیں اور یہ کام حتمی مراحل میں ہے ۔

وزارت نے ڈرون اڑانے والوں کو ہدایت کی ہے کہ جب تک رہ نما اصولوں کو حتمی شکل نہیں دے دی جاتی ،اس وقت وہ انھیں اڑانے کے لیے پولیس سے پیشگی اجازت حاصل کریں اور صرف مجاز جگہوں پر ہی اپنا یہ شوق پورا کریں۔

سعودی وزارت داخلہ کی جانب سے یہ بیان دارالحکومت الریاض کے علاقے خزامہ میں ہفتے کے روز ایک غیر شناختہ کھلونا ڈرون کو مار گرائے جانے کے بعد جاری کیا گیا ہے۔

الریاض کی سکیورٹی پر مامور اداروں نے اپنے نگرانی کے آلات کے ذریعے اس چھوٹے غیر مجاز کھلونا ڈرون کے اڑائے جانے کا پتا چلا یا تھا اور اس کے بعد سکیورٹی فورسز نے پہلے سے حاصل احکامات کے تحت اس کو مار گرایا تھا۔

واضح رہے کہ سعودی عرب کی سول ایوی ایشن اتھارٹی نے 2015 ء میں پیشگی اجازت کے بغیر ہر قسم کے ریموٹ کنٹرول ڈرونز کو اڑانے پر پابندی لگادی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں