.

الجزائر : اسرائیل کے لیے جاسوسی کے جُرم میں لائبیری کو سزائے موت کا حکم

گنی اور مالی سے تعلق رکھنے والے 6 مجرموں کو اسی مقدمے میں 10 سال تک قید کی سزائیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

الجزائر کی ایک فوجداری عدالت نے اسرائیل کے لیے جاسوسی کے جُرم میں لائبیریا سے تعلق رکھنے والے ایک شخص کو قصور وار قرار دے کر سزائے موت کا حکم دیا ہے۔ عدالت نے اسی مقدمے میں گنی اور مالی سے تعلق رکھنے والے چھے افراد کو مجرم قرار دے کر دس سال تک قید کی سزائیں سنائی ہیں ۔

الجزائر کے ایک قانونی ذریعے نے بتایا ہے کہ ملک کے جنوبی شہر غردايہ میں فوجداری عدالت نے تین افریقی ملکوں سے تعلق رکھنے والے ان سات افراد کو اسرائیل کے لیے جاسوسی کے الزامات میں قصور وار دیا ہے۔

اس مقدمے میں سزائے موت پانے والا مرکزی مجرم علم الدین فیصل لائبیری شہری ہے اور وہ لبنان میں پیدا ہوا تھا۔ان تمام مجرموں کو آٹھ ،آٹھ ہزار ڈالرز جرمانہ بھی ادا کرنا ہوگا۔

الجزائری پولیس نے ان ساتوں مجرموں کو جنوری 2015ء میں غردایہ ہی میں ایک کارروائی کے دوران گرفتار کیا تھا۔ان کے قبضے سے اسرائیل کے لیے جاسوسی اور اس سے رابطے سے متعلق دستاویزات اور ابلاغی آلات بھی برآمد ہوئے تھے۔

ان مدعا علیہان کے وکلاء نے عدالت میں یہ دعویٰ کیا تھا کہ ان کے خلاف استغاثہ نے ناکافی اور بے ربط ثبوت پیش کیے تھے۔اس لیے ان کی بنیاد پر ان کے مؤکلین کو جاسوسی ایسے حساس ایشوز پر ماخوذ کیا جاسکتا ہے اور نہ سزا دی جاسکتی ہے لیکن عدالت نے ان کے مؤقف کو مسترد کردیا تھا۔