.

امیر قطر سے کونمبول کے سربراہ کی ملاقات،عالمی کپ کی تیاریوں پر بات چیت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جنوبی امریکا کی فٹ بال کنفیڈریشن کے سربراہ نے امیر قطر شیخ تمیم بن حمد آل ثانی سے ملاقات کی ہے اور ان سے 2022ء میں قطر میں ہونے والے فٹ بال عالمی کپ کی تیاریوں اور انتظامات کے سلسلے میں بات چیت کی ہے ۔ان کی اس ملاقات سے چند ہفتے قبل ارجنٹینا اور برازیل نے قطر میں فٹ بال عالمی کپ میں شریک ہونے والی ٹیموں کی تعداد بڑھا کر اڑتالیس کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

قطر کے سرکاری میڈیا کے مطابق کونمبول کے صدر الجینڈرو ڈومنیگوز نے امیر شیخ تمیم سے دوحہ میں ملاقات کی ہے اور انھوں نے جنوبی امریکا کی فٹ بال کنفیڈریشن اور قطر کے درمیان دوطرفہ تعاون کا جائزہ لیا ہے اور انھیں مزید فروغ دینے کے طریقوں پر تبادلہ خیال کیا ہے۔

انھوں نے قطر کی 2022ء میں فیفا عالمی کپ کی تیاریوں اور متعلقہ منصوبوں میں ہونے والی پیش رفت کا جائزہ بھی لیا ہے ۔ الجینڈرو ڈومنیگوز فیفا کے نائب صدر بھی ہیں ۔

فٹ بال کی عالمی تنظیم پہلے ہی ٹورنا منٹ کی شریک ٹیموں کی تعداد بتیس تک بڑھانے سے اتفاق کرچکی ہے مگر الجینڈرو ڈومنیگوز نے فیفا کے صدر گیانی انفاٹینو کے نام ایک خط میں ٹیموں کی تعداد بڑھا کر 48 کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔فیفا کے صدر اس مطالبے کو ایک دلچسپ تجویز قرار دے چکے ہیں۔ تاہم ٹیموں کی تعداد اگر بڑھائی جاتی ہے تو اس سے قطر کے لیے مسائل پیدا ہو سکتے ہیں ۔

قطر میں ہونے والے فیفا عالمی کپ کے دورانیے کو پہلے ہی کم کرکے 28 روز تک کردیا گیا ہے جبکہ روس میں اس سال ہونے والا فٹ بال عالمی کپ ٹورنا منٹ 32 روز تک جاری رہے گا۔روس میں کھیل کے 12 میدانوں میں میچ کھلے2 جائیں گے جبکہ قطر میں اب تک کی تیاریوں کے مطابق آٹھ اسٹیڈیمز میں میچ کھیلے جائیں گے۔

اگر ٹورنا منٹ میں شریک ٹیموں کی تعداد بڑھائی جاتی ہے تو اس کا ایک حل یہ ہو سکتا ہے کہ قطر بعض میچوں کی میزبانی اپنے پڑوسی ممالک کو منتقل کردے لیکن اس میں فی الوقت ایک مسئلہ یہ ہے کہ اس کا چار خلیجی عرب ممالک سے تنازع چل رہا ہے ۔اس لیے قطر انھیں میزبانی کا نہیں کہہ سکتا ۔ یوں اس تجویز پر عمل درآمد کے امکانات کم نظر آتے ہیں ۔