سعودی عرب کی سکیورٹی امریکا کی ترجیح ہے : مائیک پومپیو

ایران کے خلاف مزید پابندیاں عاید کرنے کی ضرورت ہے: سعودی وزیر خارجہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب کے وزیر خارجہ عادل الجبیر نے ایرا ن کے خلاف مزید پابندیاں عاید کرنے کی ضرورت پر زوردیا ہے جبکہ امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کا کہنا ہے کہ سعودی عرب کی سکیورٹی امریکا کی ترجیح ہے۔

دونوں وزرائے خارجہ اتوار کو الریاض میں ملاقات کے بعد ایک مشترکہ نیوز کانفرنس میں گفتگو کررہے تھے۔عادل الجبیر نے کہا کہ ایران نے مسلسل اقوام متحدہ کی قراردادوں کی خلاف ورزی جاری رکھی ہوئی ہے اور وہ یمن کے حوثی شیعہ باغیوں کی مدد کررہا ہے اور وہ اسی کےمہیا کردہ بیلسٹک میزائلوں کو سعودی عرب کی جانب داغ کررہے ہیں ۔

انھوں نے کہا کہ ’’ہم صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی ایران بالخصوص جوہری سمجھوتے کے بارے میں پالیسی کی حمایت کرتے ہیں ‘‘۔

اس موقع پر مائیک پومپیو نے کہا کہ سعودی عرب کی سکیورٹی امریکا کی ترجیح ہے۔انھوں نے کہا کہ ایران دہشت گردی کو اسپانسر کرنے والا سب سے بڑا ملک ہے۔

امریکی وزیر خارجہ نے یہ بات زور دے کر کہی کہ ان کا ملک دہشت گردی سے نمٹنے کے لیے سعودی عرب کا ساتھ دینے کو تیار ہے۔ان کا کہنا تھا کہ سعودی عرب نے ویژن 2030ء کے تحت جو کچھ حاصل کیا ہے،ہم اس سے متاثر ہوئے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ایران یمن میں حوثیوں کو ہتھیار مہیا کرکے خطے کو عدم استحکام سے دوچار کررہا ہے۔انھوں نے نشان دہی کہ جوہری سمجھوتا بھی ایران کے رویے اور کردار میں کوئی تبدیلی لانے میں ناکام رہا ہے اور وہ یمن میں حوثی ملیشیا کو عسکری تربیت دے کر اور اسلحہ مہیا کرکے تشدد کی حمایت کررہا ہے۔

مائیک پومپیو سعودی عرب کے سرکاری دورے پر ہفتے کے روز دارالحکومت الریاض پہنچے تھے۔امریکی وزارت خارجہ کا قلم دان سنبھالنے کے بعد ان کا خطے کا یہ پہلا دورہ ہے۔ وہ اردن اور اسرائیل بھی جائیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں