.

یمنی فوج نے حوثیوں کے مضبوط گڑھ صعدہ کاتمام اطراف سے گھیراؤ کر لیا:صدرہادی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمنی صدر عبد ربہ منصور ہادی نے کہا ہے کہ ان کی فوج نے حوثی باغیوں کے مضبوط گڑھ شمالی صوبے صعدہ کا مختلف اطراف سے گھیراؤ کر لیا ہے اور قومی فوج نے صوبہ صعدہ کے مختلف اضلاع کے بعض علاقوں کو آزاد کرا لیا ہے۔

انھوں نے سعودی عرب کی سرحد کے نزدیک واقع صوبہ صعدہ میں حوثی باغیوں کے خلاف جنگی کارروائی کی یہ تفصیل صوبائی گورنر طرشان الوائلی کے ساتھ ملاقات کے بعد بتائی ہے۔گورنر نے انھیں صوبے میں فوج کی جنگی فتوحات کے بارے میں بتایا ہے۔

یمن کی سرکاری خبررساں ایجنسی کے مطابق یمنی فوج نے صعدہ میں واقع راضح اور ملاحیظہ کے درمیان واقع شاہراہ کو منقطع کردیا ہے اور مندب اور دوسرے علاقوں میں آٹھ جگہوں کو حوثیوں کے قبضے سے واگزار کرکے بحال کر دیا ہے۔

صدر عبد ربہ منصور ہادی نے قومی فوج اور اس کی اتحادی مزاحمتی تحریک کی فورسز کی عرب اتحاد کی مدد سے ان پے درپے جنگی فتوحات کو سراہا ہے۔ یمنی فوج کے ایک کمانڈر نے بھی بتایا ہے کہ ان کی فورسز نے صعدہ کے شمال مغرب میں حوثی ملیشیا سے لڑائی کے بعد ایک بڑے علاقے کو بازیاب کرا لیا ہے۔

بریگیڈئیر جنرل ذیاب القبلی نے بتایا کہ قومی فوج مران کے پہاڑوں کی طرف سے حوثیوں کے مضبوط گڑھ کی جانب پیش قدمی کررہی ہے اور وہ ان سے چند کلومیٹر کے فاصلے کی دوری پر ہے۔قومی فوج مختلف محاذوں پر حوثی جنگجوؤں کا گھیرا تنگ کررہی ہے۔

انھوں نے وضاحت کی ہے کہ حوثیوں کے خلاف اس فوجی آپریشن کی قومی آرمی نے منصوبہ بندی کی تھی ۔ اتحادی فورسز نے اب صعدہ کا پانچ محاذوں سے گھیراؤ کر لیا ہے۔ اس نے عرب اتحاد ی فوج کی مدد سے پیش قدمی جاری رکھی ہوئی ہے اور وہ حوثی ملیشیا کے لیڈر عبدالملک الحوثی تک پہنچنے کی کوشش کررہی ہے۔اس کے بارے میں خیال کیا جاتا ہے کہ وہ مران کے غاروں میں کہیں چھپا ہوا ہے۔