.

خامنہ ای نے ٹرمپ کے خطاب کو "بے ہودہ اور سطحی" قرار دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایرانی رہبر اعلی علی خامنہ ای نے امریکی صدر کی جانب سے ایرانی جوہری معاہدے سے علاحدگی کے فیصلے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ "ٹرمپ آپ غلطی کا ارتکاب کر بیٹھے ہیں"۔

بدھ کے روز اپنے خطاب میں خامنہ ای کا کہنا تھا کہ "ٹرمپ نے اپنی حالیہ تقریر میں 10 سے زیادہ مرتبہ جھوٹ بولا"۔ ایرانی رہبر اعلی نے امریکی صدر کے خطاب کو "بے ہودہ اور سطحی" قرار دیا۔

خامنہ ای نے واضح کیا کہ "مطلوبہ ضمانتوں کے بغیر یورپی ممالک کے ساتھ جوہری معاہدے کو جاری رکھنا غیر منطقی ہے"۔

خامنہ ای کا موقف ایرانی صدر کے اُس اعلان کے متضاد ہے جس میں حسن روحانی نے کہا تھا کہ یورپی ممالک نے جوہری معاہدے میں باقی رہنے کی پاسداری کی تو ایران بھی اس سمجھوتے کا حصہ رہے گا۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے منگل کے روز اعلان کیا تھا کہ ان کا ملک جوہری معاہدے سے دست بردار ہو رہا ہے۔ اس اعلان کے موقع پر ٹرمپ نے واضح کیا کہ غیر ملکی کمپنیوں کے پاس ایران سے نکلنے کے لیے 3 سے 6 ماہ کا عرصہ ہے جس کے بعد سر زنش کے اقدامات ایران کو اپنی لپیٹ میں لے لیں گے اور اسے امریکی منڈیوں میں داخلے سے روک دیا جائے گا۔