متعدد شوہر رکھنے کا الزام، الشباب نے خاتون سنگ سار کردی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

صومالیہ میں شدت پسند گروہ الشباب کے جنگجوؤں نے ایک خاتون کو سنگسار کر دیا۔ اس پر الزام عائد کیا گیا تھا کہ اس کے متعدد شوہر ہیں۔

خبر رساں اداروں کے مطابق عینی شاہدین نے بدھ کے دن بتایا ہے کہ صومالیہ کے زیریں شبیلی ریجن میں ایک تیس سالہ خاتون شکریہ عبداللہ کو پتھر مار مار کر ہلاک کر دیا گیا۔ بتایا گیا ہے کہ اس سنگساری کو دیکھنے کی خاطر درجنوں افراد وہاں موجود تھے۔

اس خاتون کے بارے میں بتایا گیا ہے کہ اس کے گیارہ شوہر تھے۔ شبیلی ریجن میں شدت پسند گروہ الشباب کے گورنر محمد ابو عثمان نے روئٹرز کو بتایا کہ اس خاتون کے نو شوہروں نے ’ایک عدالت‘ میں بیان دیا تھا کہ شکری ان کے نکاح میں ہے۔ ان میں شکری کا قانونی خاوند بھی شامل تھا۔ ان کی موجودگی میں اسے سنگ سارکیا گیا۔

الشباب نامی انتہا پسند گروہ صومالیہ میں اسلامی قوانین کے نفاذ کی خاطر مسلح بغاوت جاری رکھے ہوئے ہے۔ اس جنگجو گروہ نے اپنے زیر قبضہ علاقوں میں اپنا عدالتی نظام قائم کر رکھا ہے، جہاں سزاؤں کے خلاف اپیل کی کوئی گنجائش نہیں اور نہ ہی ملزم کوعدالت میں پیش کیا جاتا ہے۔ یہ عدالتیں ماضی میں بھی ملزمان کو سخت سزائیں سنا چکی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں