.

داعش تنظیم کے 5 سینئر کمانڈر گرفتار کیے گئے ہیں : ٹرمپ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ٹوئیٹر پر جمعرات کے روز اعلان کیا کہ داعش تنظیم سے تعلق رکھنے والے 5 نمایاں ترین مطلوب افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

امریکی صدر نے اپنی ٹوئیٹ میں پانچوں داعشیوں کی گرفتاری کے وقت اور جگہ کے بارے میں وضاحت نہیں کی۔

ایسا نظر آتا ہے کہ ٹرمپ کی مراد داعش کے اُن پانچ کمانڈروں سے ہے جن کو عراقی سکیورٹی فورسز نے بدھ کے روز شام کے ساتھ سرحد پر گرفتار کیا۔ یہ کارروائی امریکی انٹیلی جنس اور ترکی کے تعاون سے عمل میں آئی۔

عراقی حکومت کے سکیورٹی مشیر ہشام الہاشمی نے جمعرات کے روز برطانوی خبر رساں ایجنسی کو بتایا تھا کہ عراقی انٹیلی جنس کے افسران نے داعش کے سرغنے ابو بکر البغدادی کے ایک معاون کو حراست میں لیا ہوا ہے۔ مذکورہ افسران نے اس معاون کے موبائل فون میں موجود ایپلی کیشن کو تنظیم کے چار کمانڈروں کو جال میں پھنسانے کے واسطے استعمال کیا۔

الہاشمی کے مطابق ترکی کے حکام نے رواں برس فروری میں اپنی سرزمین پر داعش کے رہ نما اسماعیل العیثاوی عرف ابو زید العراقی کو گرفتار کیا تھا۔ بعد ازاں اسے عراقی انٹیلی جنس کے ذمّے داران کے حوالے کر دیا گیا۔

الہاشمی نے العیثاوی کو داعش سربراہ البغدادی کا براہ راست معاون قرار دیا۔ وہ کئی ممالک میں داعش کے بینک کھاتوں میں مالی رقوم کی منتقلی کا ذمّے دار تھا۔

عراقی مشیر کا کہنا ہے کہ گرفتار شدگان میں مشرقی فرات کے علاقے میں تنظیم کا والی صدام الجمل شامل ہے، اس کا تعلق شام سے ہے۔

الہاشمی کے مطابق العیثاوی اور الجمل داعش تنظیم کے گرفتار ہونے والے اہم ترین افراد ہیں۔