.

وادی گولان پر میزائل حملوں کی منصوبہ بندی جنرل سلیمانی نے کی تھی: اسرائیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیل نے الزام عاید کیا ہے کہ جمعرات کو مقبوضہ وادی گولان پر شام کے اندر سے میزائل حملوں کی منصوبہ بندی ایرانی پاسداران انقلاب کے بیرون ملک سرگرم عسکری ونگ فیلق القدس کے سربراہ جنرل قاسم سلیمانی نے کی

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق اسرائیلی فوج کے ترجمان لیفٹیننٹ کرنل جوناتھن کونکرس نے صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ جنرل قاسم سلیمانی نے نہ صرف اسرائیل کے زیرانتظام علاقے وادی گولان میں میزائل حملوں کا حکم دیا بلکہ اس کارروائی کی خود قیادت کی تاہم وہ اپنے مقاصد میں کامیاب نہیں ہوسکے ہیں۔

روس کو مطلع کیا گیا تھا

ادھر ایک دوسری پیش رفت میں اسرائیلی حکام کا کہنا ہے کہ شام میں کل جمعرات کے روز مبینہ ایرانی اڈوں کو نشانہ بنائے جانے سے قبل شام کے حلیف روس کو خبر دے دی گئی تھی۔

اسرائیلی فوج کے ترجمان نے بتایا کہ ہم نے شام میں فوجی کارروائی سے قبل روس کو اطلاع دی تھی کہ ہماری طرف سے کارروائی ہونے والی ہے تاہم انہوں نے اس کی مزید تفصیل نہیں بتائی۔

اسرائیل کے مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق جمعرات کے روز اسرائیلی فوج نے شام کے اندر بنائے گئے ایرانی فوجی اڈوں کو وسیع پیمانے پر میزائلوں سے نشانہ بنایا ہے جس کے نتیجے میں زیادہ تر مراکز تباہ کردیے گئےہیں۔

نشانہ بننے والے مقامات

شام کے سرکاری ذرائع ابلاغ نے عسکری ذرائع کے حوالے سے تصدیق کی ہے کہ جمعرات کو اسرائیلی فوج نے شام کے اندر کئی فوجی مراکز کو میزائلوں سے نشانہ بنایا ہے۔ ان میں ایرانی اسلحہ کے گودام اور دیگر اہم مراکز شامل ہیں۔

ذرائع نے خبر رساں ایجنسی ’سانا‘ کو بتایا کہ اسرائیل کی طرف سے داغے گئے بعض میزائل فضائی دفاع بریگیڈ، راڈار سسٹم، اسلحہ گودامو اور فوجی کمپاؤنڈز پر گرےہیں تاہم ان کی جگہ ظاہر نہیں کی گئی۔

اسدی فوج کے ایک ذریعے نے خبر رساں ایجنسی ’اے ایف پی‘ کو بتایا کہ اسرائیلی فوج کے میزائلوں سے دمشق کے نواحی علاقے الضمیرمیں درعا روڈ پر واقع فضائی دفاع کے بریگیڈ 38 اور دیگر مقامات کو نشانہ بنایا گیا۔ اس کے علاوہ متعدد میزائل دمشق کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر داغے گئے تھے جنہیں ہدف تک پہنچنے سے قبل ہی مار گرایا گیا۔

انسانی حقوق کے کارکنوں کے مطابق دمشق میں سرکاری یونٹ 116 اور فضائی اڈے 122 میں زور دار دھماکوں کی آوازیں سنی گئی ہیں جب کہ طبریا کے مقام پر بھی فوجی اڈوں میں دھوئیں کے بادل بلند ہوتے دیکھے گئےہیں۔ اطلاعات کے مطابق قدسیہ، العمظمیہ اور حمص مں بھی متعدد فوجی مراکز پر اسرائیلی فوج نے حملے کیے۔