امریکی سفارت خانے کہ القدس منتقلی خطرناک پیش رفت ہے: عرب لیگ

عالمی برادری نے امریکی موقف کو مسترد کردیا ہے: ابو الغیط

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

عرب لیگ کےسیکرٹری جنرل احمد ابو الغیط نے ایک بیان امریکی سفارت خانے کی بیت المقدس منتقلی کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ امریکی انتظامیہ کو اس خطرناک اقدام کے حقیقی نتائج کا کوئی ادراک نہیں۔

قاہرہ میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے عرب لیگ کے سربراہ نے کہا کہ غزہ کی پٹی میں سوموار کے روز اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے فلسطینیوں کا قتل عام خطرے کی گھنٹی ہے۔ ہم ان تمام ممالک کو خبردار کرتے ہیں کو قانونی اور اخلاقی موقف کو نظرانداز کرتے ہوئے فلسطین کے بارے میں غیر منصفانہ روش پر چل رہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ امریکا کی جانب سے سفارت خانے کی بیت المقدس منتقلی ایک خطرناک پیش رف ہے اور اس کے بھیانک نتائج سامنے آسکتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ میرا خیال ہے کہ امریکیوں کو سفارت خانے کی بیت المقدس منتقلی کے خطرناک نتائج کا ادراک نہیں۔

خیال رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے حکم پر تل ابیب میں قائم امریکی سفارت خانہ کل سوموار کوبیت المقدس منتقل کردیا گیا۔ سفارت خانے کی بیت المقدس منتقلی پوری دنیا میں امریکا کو کڑی تنقید کا سامنا ہے۔

احمد ابو الغیط کا کہنا تھا کہ ایسے قابل احترام ممالک جو قانون، عالمی برادری کے متفقہ موقف اور فلسطینی قوم کے حقوق کی حمایت کرتے ہیں امریکی سفارت خانے کی القدس منتقلی میں شامل نہیں ہوئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں