ظلم ایرانی نظام کو جڑوں سے اکھاڑ سکتا ہے: احمدی نژاد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایران کے سابق صدر محمود احمدی نژاد نے اپنے سابق معاون حمید بقائی کو دوران حراست نا مناسب حالات میں رکھنے پر ملک کے سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ایک ریکارڈڈ بیان میں سابق صدر محمود احمدی نژاد نے خبردار کیا ہے کہ ایرانی رجیم کو المناک واقعات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے اور نظام حکومت کو جڑوں سے اکھاڑا بھی جاسکتا ہے۔

احمدی نژاد کا کہنا تھا کہ حکومت اپنی غلطیوں کی اصلاح کے بجائے ان پر اصرار کررہی ہے۔ اگر یہ روش برقرار رہی تو ایرانی رجیم کو ناقابل تلافی نقصان پہنچ سکتا اور المناک واقعات رونما ہوسکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ سب سے پہلے حکومت اور برسراقتدار طبقہ المناک واقعات کا شکار ہوگا جس کے بعد ایرانی رجیم کو بھی اکھاڑا جا سکتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ظلم زیادہ دیر تک نہیں چل سکتا۔ میں حیران ہوں کہ حکومت ہوش کے ناخن کیوں نہیں لیتی۔ ظلم ایرانی رجیم کو جڑوں سے اکھاڑ سکتا ہے۔

خیال رہے کہ ایران کے سابق صدر محمود احمدی نژاد موجود حکومت اور سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای کے سخت ناقد سمجھے جاتے ہیں۔ سابق صدر اور ایرانی حکومت کے درمیان سیاسی رسا کشی کا سلسلہ کئی سال سے جاری ہے اور دونوں طرف سے ایک دوسرے پر کرپشن کے الزامات عاید کیے جاتے رہے ہیں۔

احمدی نژاد کےایک سابق معاون خصوصی حمید بقائی بھی مبینہ طور پر کرپشن ہی کے الزام میں جیل میں قید ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں