سعودی فورسز نے یمنی حوثیوں کا خمیس مشیط پر بیلسٹک میزائل سے حملہ ناکام بنا دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب کے فضائی دفاعی نظام نے یمن سے حوثی باغیوں کے جنوبی شہر خمیس مشیط کی جانب داغے گئے ایک بیلسٹک میزائل کو فضا ہی میں تباہ کردیا ہے۔

عرب اتحاد کے ترجمان کرنل ترکی المالکی کے مطابق حوثی ملیشیا نے ہفتے کی شام یمن سے سعودی عرب کے جنوبی سرحدی علاقے کی جانب دو بیلسٹک میزائل داغے تھے۔ان میں سے ایک میزائل کو ناکارہ بنا دیا گیا ہے اور ایک میزائل خمیس مشیط کے غیر آباد صحرائی علاقے میں گرا ہے۔

ترجمان نے بتایا ہے کہ ان میں سے ایک میزائل کومقامی وقت کے مطابق شام سوا چھے بجے کے قریب روک کر ناکارہ بنایا گیا ہے جبکہ دوسرا میزائل شہر کے آبادی والے علاقوں سے دور بے آباد صحرائی علاقے میں گرا ہے ۔

اس واقعے سے چار روز قبل 15 مئی کو عرب اتحادی فورسز نے ایران کی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا کی یمن کے شمالی شہر صعدہ سے سعودی عرب کی جانب بیلسٹک میزائل داغنے کی کوشش ناکام بنا دی تھی۔

اسی ماہ کے اوائل میں سعودی عرب کی فضائی دفاعی افواج نے حوثی ملیشیا کے سرحدی شہروں نجران اور جازان کی جانب داغے گئے دو میزائلوں کو ناکارہ بنا دیا تھا۔حوثی ملیشیا کو یمن میں صدر عبد ربہ منصورہادی کی قیادت میں فوج کی کارروائیوں میں مسلسل شکست کا سامنا ہے اور یمنی فوج نے حالیہ دنوں کے دوران میں صعدہ کے بہت سے علاقوں پر دوبارہ کنٹرول حاصل کر لیا ہے اور باغی جنگجوؤں کو وہاں سے نکال باہر کیا ہے۔

واضح رہے کہ حوثی شیعہ باغی ستمبر 2104ء میں قانونی حکومت کے خلاف بغاوت برپا کرنے کے بعد سے یمن کی سرحد کے نزدیک واقع سعودی عرب کے جنوبی شہروں بالخصوص نجران کی جانب لا تعداد میزائل اور دس ہزار سے زیادہ راکٹ داغ چکے ہیں۔ حوثی جان بوجھ کر شہریوں اور آباد علاقوں کو نشانہ بنانے کی کوشش کرتے ہیں مگر سعودی عرب کی شاہی فضائیہ فضا ہی میں ان تمام بیلسٹک میزائلوں اور راکٹوں کو ناکارہ بنا چکی ہے جبکہ صرف چند ایک ہی بے آباد علاقوں میں گرے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں