.

ریپ کے ملزم ھاروی وائن اسٹائن پر فرد جرم عاید کردی گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا میں حکام نے ہالی وڈ کے پروڈیوسر ہاروی وائن سٹائن پر ریپ اور دو خواتین کی جانب سے متعدد جنسی حملوں کے الزامات کے تحت فرد جرم عائد کر دی ہے۔

ہاروی نے جمعہ کو خود کو پولیس کے حوالے کیا تھا۔

نیویارک پولیس کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق ' ہاروی وائن سٹائن کو حراست میں لے لیا گیا ہے اور ان پر دو مختلف خواتین کی جانب سے ریپ اور غیر قانونی سیکس، جنسی حملے اور نامناسب جنسی رویہ برتنے کا الزام لگایا گیا ہے۔'

پولیس کے اعلامیے میں ان دونوں خواتین کا شکریہ ادا کیا گیا ہے اور ان کی بہادری کی داد دی گئی ہے کہ وہ انصاف کے حصول کے لیے سامنے آئی ہیں۔ خواتین کے نام سامنے نہیں آئے تاہم امریکی میڈیا نے کہا ہے کہ بعض الزامات کا تعلق اداکارہ لوسیا ایونز سے ہے۔

66 سالہ وائن سٹین پر جنسی حملے، ریپ اور ہراساں کیے جانے کے متعدد الزامات ہیں جبکہ ان کا کہنا ہے کہ انھوں نے کسی کے ساتھ بھی بغیر رضامندی کے کوئی غلط نہیں کیا اور یہ پہلا موقع ہے کہ ان پر فردِ جرم عائد کی گئی ہے۔

وائن اسٹائن کو پولیس کی حراست میں دیکھا جاسکتا ہے۔ انہیں ہتھکڑی لگائی گئی اور ان کا چہرہ اترا ہوا ہے۔

ان پر فردِ جرم مین ہیٹن گرینڈ جیوری کی تحقیقات کی روشنی میں عائد کی گئی ہے۔

نیویارک ٹائمز نے خبر دی ہے کہ بعض الزامات کا تعلق اداکارہ لوسیا ایونز سے ہے۔ انھوں نے پچھلے سال امریکی جریدے نیویارکر میں ایک مضمون لکھ کر وائن سٹائن کے خلاف الزامات لگائے تھے۔

یہ واضح نہیں ہے کہ آیا ان پر مزید الزامات عائد کیے جائیں گے یا نہیں۔ یہ معلوم ہے کہ نیویارک پولیس ان کے خلاف اداکارہ پاز دے لا ہیورتا کے ریپ کی بھی تحقیقات کر رہی ہے۔

اسی ماہ نیٹ فلکس کی پروڈیوسر الیگزینڈرا کینوسا نے نیویارک کی ایک عدالت میں دستاویزات جمع کروائی ہیں جن میں الزام لگایا گیا ہے کہ انھیں وائن سٹائن نے ریپ کیا ہے۔

نیویارک ٹائمز کے مطابق وائن سٹائن پر مین ہیٹن کی فوجداری عدالت میں مقدمہ چلایا جائے گا۔

ہاروی وائن سٹائن نے اس بارے میں کچھ نہیں بتایا کہ آیا ان کے موکل کا زیرِ حراست ہونا ناگزیر ہے یا نہیں۔

جنسی سکینڈلز کی زد میں آئے ہوئے ہالی وڈ کے پروڈیوسر ہاروی سائن سٹائن پر متعداد خواتین نے جنسی حملوں اور ریپ کے الزامات لگائے ہیں۔

مشہور اداکارائیں جیسے کیٹ بیکنسیل، لائسیٹ انتھونی اور گوائنتھ پالٹرو ان معروف ناموں میں شامل ہیں جنھوں نے پروڈیوسر پر الزامات لگائے ہیں۔

اس کے علاوہ اداکارہ ایشلی جڈ کہتی ہیں کہ پرڈیوسر کی جانب سے ہراساں کیے جانے کی وجہ سے ان کے کیرئیر کو نقصان پہنچا ہے۔

ہاروی وائن سٹائن پر جاری کیسز میں سے ایک میں اطالوی ماڈل ایمبرا باٹیلانا نے ہاروی وائن سٹائن پر ان کو دبوچنے کا الزام لگایا تھا۔

تفتیش کاروں نے اس الزام پر کاروائی نہ کرنے کا فیصلہ کیا حالانکہ ان کے پاس آڈیو ریکارڈنگ موجود تھی جس میں ہاروی وائن سٹائن یہ بات تسلیم کرتے ہیں کہ انھوں نے ماڈل کی چھاتی کو چھوا تھا اور وعدہ کیا تھا کہ دوبارہ نہیں کریں گے۔

لاس اینجلس کے پراسیکیوٹرز اس وقت کئی ایسے مقدمات کا جائزہ لے رہے ہیں جن میں پولیس نے ہاروی وائن سٹائن کے خلاف لگائے گئے الزامات کی تفتیش کی تھی اور مقدمے شروع کیے تھے۔

اس کے علاوہ لندن کی میٹروپولیٹن پولیس بھی ہاروی وائن سٹائن کے خلاف جنسی ہراساں کیے جانے والے الزامات کا جائزہ لے رہی ہے۔