.

محمد صلاح کا زخم سنگین ہے،شاید عالمی کپ نہ کھیل سکیں : مینجر لیور پول

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لیور پول کے مینجر جرگن کلاپ نے انکشاف کیا ہے کہ مصری فٹ بالر محمد صلاح کا زخم ’’سنگین ‘‘ ہے۔ وہ ہفتے کی شب ریال میڈرڈ کے خلاف چیمپئنز لیگ کے فائنل میچ کے پہلے ہاف میں زخمی ہوگئے تھے اور پھر گراؤنڈ سے باہر چلے گئے تھے۔

مینجر کلاپ نے میچ کے بعد نیوز کانفرنس میں کہا کہ ’’ یہ ایک شدید زخم ہے ، وہ اس وقت ایکس رے کے لیے اسپتال میں ہیں۔یہ ہنسلی اور کندھے کی ہڈی ہوسکتی ہے۔وہ بظاہر بہتر نظر نہیں آرہی ہے‘‘۔

محمد صلاح نے اس سیزن کے دوران میں لیورپول کی جانب سے کھیلتے ہوئے 44 گول کیے تھے۔وہ ریال میڈرڈ کے خلاف فائنل میچ میں سرگئی راموس کے ساتھ ٹکرانے کے بعد کندھے کے بل گر کر زخمی ہوگئے تھے ۔بظاہر راموس نے ان کے بازو کو فٹ بال چھیننے کی کوشش کے دوران میں دبایا تھا جس سے وہ کندھے کے بل گرے تھے۔

اس وقت تک فائنل میچ کا نصف گھنٹے کا کھیل ہوا تھا اور لیور پول کا پلڑا بھاری جا رہا تھا لیکن صلاح کے زخمی ہونے کے بعد ان کی ٹیم بھی کمزور پڑ گئی اور فائنل میں تین ایک سے ہار گئی۔مینجر کلاپ کا کہنا ہے کہ صلاح کا زخمی ہونا ہی دراصل ان کی شکست کا سبب بنا ہے اور میچ نے یک دم پلٹا کھایا تھا۔

انھوں نے کہا کہ ’’ یقینی طور پر کھیل میں یہ ایک بڑا لمحہ تھا۔ہمارے لیے یہ ایک بہت بڑا چیلنج اور ایک ریسلنگ تھی۔صلاح کے زخمی ہونے کے بعد لڑکے صدمے سے دوچار ہوگئے تھے‘‘۔اس کے بعد ریال میڈرڈ کی ٹیم نے لیور پول کو یکے بعد دیگرے دو گول کر دیے تھے۔

مصری فٹ بال ٹیم کے ٹویٹر اکاؤنٹ پر محمد صلاح کی ایک تصویر اس کیپشن کے ساتھ جاری کی گئی ہے کہ ’’وہ بہت جلد تندرست ہوجائیں گے‘‘۔تاہم مینجر کلاپ نے اعتراف کیا ہے کہ صلاح روس میں ہونے والے فیفا فٹ بال عالمی کپ میں شاید حصہ نہ لےسکیں۔

یہ توقع کی جارہی تھی کہ وہ 1990ء کے بعد پہلی مرتبہ فٹ بال کے عالمی کپ میں شرکت کرنے والی مصر ی ٹیم کی قیادت کریں گے۔ان کی ٹیم اپنا پہلا میچ 15 جون کو یوروگوائے کے خلاف کھیلے گی اور اس میں اب سے تین ہفتے سے بھی کم وقت رہ گیا ہے۔