سوڈان کی یمن جنگ میں شرکت ’’اخلاقی ذمے داری‘‘ تھی : وزیر دفاع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سوڈانی وزیر دفاع عواد بن عوف نے کہا ہے کہ ان کے ملک کی عرب اتحاد کے ساتھ مل کر یمن میں حوثی شیعہ باغیوں کے خلاف جنگ میں شرکت ایک ’’اخلاقی ذمے داری‘‘ تھی ۔

سوڈان ٹرائبیون کی رپورٹ کے مطابق وزیر دفاع ابن ِ عوف نے یہ بات خرطوم میں سعودی عرب کے سفیر علی بن حسن جعفر سے گفتگو کرتے ہوئے کہی ہے ۔انھوں نے سوڈان اور سعودی عرب کے درمیان دو طرفہ تعاون کے فروغ کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا ہے۔

اس ملاقات کے بعد سوڈانی صدر عمر حسن البشیر کے دفتر کی جانب سے بھی ایک بیان جاری کیا گیا ہے۔اس میں صدر بشیر نے سعودی حکام کو یقین دہانی کرائی ہے کہ سوڈانی فوج ملک میں موجود ہ ابتر معاشی صورت حال کے باوجود یمن میں حوثی ملیشیا کے خلاف لڑائی جاری رکھے گی۔

واضح رہے کہ سوڈا ن 2015ء سے یمن میں صدر عبد ربہ منصور ہادی کی قانونی حکومت کی حمایت میں اور ایران کے حمایت یافتہ حوثی شیعہ باغیوں کے خلاف برسر پیکار عرب اتحاد کا حصہ ہے۔ حوثی ملیشیا نے ستمبر 2014ء میں صدر منصور ہادی کی حکومت کے خلاف مسلح بغاوت برپا کی تھی اور دارالحکومت صنعاء پر قبضہ کر لیا تھا جس کے بعد یمنی صدر جلا وطن ہونے پر مجبور ہوگئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں