امریکی، کینیڈین اور ویلش خواتین سعودی عرب میں خواتین انسٹرکٹروں کو تربیت دیں گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکا ، کینیڈا اور ویلز سے تعلق رکھنے والی خواتین کو سعودی عرب میں خواتین ڈرائیونگ انسٹرکٹروں کو تربیت دینے کے لیے منتخب کر لیا گیا ہے۔

بی بی سی کی ایک رپورٹ کے مطابق ویلش سوسان نیو بان ، کینیڈین ڈی بوراہ شیر ووڈ اور امریکی نرما ایڈریان زین 24 جون سے سعودی عرب میں خواتین کو تربیت دے سکیں گی۔

یہ خواتین دو سال تک سینیر معائنہ کار کے طور پر کام کریں گی ۔وہ نئی سعودی خواتین ٹرینروں اور ممتحینس کو تربیت دیں گی ۔

سعودی عرب میں اب تک قریباً آٹھ ہزار خواتین ڈرائیونگ لائسنس حاصل کر چکی ہیں۔ مملکت کے پانچ شہروں میں ڈرائیونگ اسکول قائم کیے گئے ہیں ۔ان اسکولوں میں بیرون ممالک سے ڈرائیونگ لائسنس حاصل کرنے والی سعودی خواتین اپنی ہم وطنوں کو کاریں چلانے کی تربیت دیں گی۔

شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے ستمبر 2017ء میں ایک شاہی فرمان کے ذریعے مملکت میں گذشتہ کئی عشروں سے خواتین کی ڈرائیونگ پر عاید پابندی 24 جون 2018ء سے ختم کرنے کا اعلان کیا تھا۔ اس تاریخ کے بعد 18 سال یا اس سے زائد عمر کی خواتین ڈرائیونگ لائسنس کے حصول کے لیے درخواست دے سکیں گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں